”ابھی دیر نہیں ہوئی“شہباز شریف نے سپیکر قومی اسمبلی کو وزیراعظم کیلئے اہم پیغام دیدیا

2019 ,جون 19



اسلام آباد (مانیٹرنگ رپورٹ) اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے قومی اسمبلی میں بجٹ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سپیکر صاحب آپ عمران خان کے ساتھی ہیں، میرا ایک پیغام پہنچادیں، عمران خان کوپیغام دیں کہ ابھی دیرنہیں ہوئی، ملکی معیشت کی بہتری کیلئے حکومت ایک قدم آگے آئے ،اپوزیشن دوقدم آگے بڑھائے گی۔ اپوزیشن لیڈز شہبازشریف نے وزیراعظم کے خطاب پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سلیکٹڈ وزیراعظم نے رات گئے قوم سے خطاب کیا، جس پر سپیکر نے شہبازشریف کی تقریر سے سلیکٹڈ کا لفظ حذف کرادیا ،اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ عمران خان نے کہا شہبازشریف اورحمزہ کونہیں چھوڑوں گا، وزیراعظم نے این آر او کو بے شمار بار دہرایا، وزیراعظم قوم کو بتائیں، کس نے این آر او مانگا؟ اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ وزیراعظم سے این آر او رات کو مانگا یا دن کو؟ وزیراعظم قوم کونہیں بتاسکتے توسپیکرصاحب کے کان میں بتادیں۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان نے مجھ پرانہیں رشوت دینے کی پیشکش کاالزام لگایا،وزیراعظم غلط بیانی اورالزام تراشی چھوڑدیں،دنیاکووزیراعظم پراعتمادنہ رہاتوبات انڈے،مرغی اورکٹے پررہ جائےگی۔ شہبازشریف نے بجٹ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ مہنگائی نے غریب عوام کی کمرتوڑکررکھ دی ہے،غریب سوچتاہے کہ بچے کی کتاب لاؤں یا سبزی؟انہوں نے کہا کہ پاکستان کابجٹ آئی ایم ایف نے بنایاہے،حکومت ریونیوکاہدف کیسے حاصل کرےگی؟4 ہزارارب ریونیوکاہدف ہماری حکومت نے حاصل کیا،5 ہزار 500 ارب کے ریونیوہدف میں زیادہ تران ڈائریکٹ ٹیکس ہیں، عمران خان کہتے تھے ریونیوٹارگٹ 8 ہزارارب پرلے جاؤں گا،انہوں نے کہا کہ اس بجٹ میں 70 فیصدبلاواسطہ ٹیکسزہیں،بجٹ میں مہنگائی کم کرنے کے اقدامات ہونے چاہیے تھے، شہبازشریف نے کہا کہ رواں مالی سال میں حکومت نے 2 منی بجٹ پیش کیے، سندھ حکومت نے فنڈزنہ ملنے پردن رات احتجاج کیا،ہمارے دورکے منصوبوں کی تختیاں ہٹاکراپنی لگانے پرلڑائی کررہے ہیں،تختیاں اکھاڑکراپنی لگاناہی اس حکومت کی کامیابی ہے۔

    متعلقہ خبریں