نکاح پرنکاح کیس : عدالت نے اداکارہ میرا سے متعلق اپنا بڑا حکم سنا دیا

2019 ,اپریل 16



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) سیشن عدالت نے اداکارہ میرا کی فیملی عدالت کی جانب سے خود کو عتیق الرحمان کی بیوی قرار دیئے جانے کے فیصلے کیخلاف اپیل پر فریقین کے وکلا کو حتمی بحث کے لیے 27 اپریل کو طلب کر لیا ہے۔ ایڈیشنل سیشن جج عدنان طارق نے نکاح پر نکاح کیس میں میرا کی اپیل پر سماعت کی، وکلا کی ہڑتال کے باعث کیس پر کوئی کارروائی نہ ہو سکی، عدالت نے وکلا کی ہڑتال کی وجہ سے کیس کی سماعت ملتوی کرتے ہوئے فریقین کے وکلا کو دوبارہ 27 اپریل کو طلب کرلیا۔اسکینڈل کوئین نے اپنے اپیل میں موقف اختیار کیا ہے کہ فیملی عدالت نے حقائق کے برعکس فیصلہ سنایا حالانکہ وہ عتیق الرحمان کو جانتی نہیں، اس نے عتیق الرحمان سے کوئی شادی نہیں کی اورعتیق الرحمان عدالت کو گمراہ کررہا ہے۔ اداکارہ میرا نے استدعا کی کہ عدالت فیملی عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دے۔واضح رہے کہ اس سے قبل فیملی عدالت نے میرا کو عتیق الرحمان کی بیوی قرار دیا تھا۔ فیملی کورٹ کے فیصلے کو میرا نے سیشن کورٹ میں چیلنج کررکھا ہے۔ اس سے قبل یہ خبر تھی کہ عدالت نے نکاح پر نکاح کیس میں اداکارہ میرا کے مبینہ شوہر عتیق الرحمان کی کیس بحالی کی درخواست منظور کرتے ہوئے میرا کو 2 مارچ کو طلب کرلیا۔لاہور کینٹ کچہری میں سینئر جوڈیشل مجسٹریٹ عظمت اللہ اعوان کی عدالت میں اسکینڈل کوئین اداکارہ میرا کے خلاف نکاح پر نکاح کیس کی سماعت ہوئی۔ دوران سماعت جوڈیشل مجسٹریٹ نے اداکارہ میرا کے مبینہ شوہر کے وکلا کے دلائل سننے کے بعد عتیق الرحمان کی فوجداری ایکٹ کے تحت کیس بحالی کی درخواست منظور کرتے ہوئے اداکارہ میرا کو طلبی کے نوٹس جاری کردئیے، عدالت نے کیس کی مزید سماعت 2 مارچ تک ملتوی کردی، واضح رہے کہ فیملی عدالت ادکارہ میرا کو پہلے ہی عتیق الرحمان کی بیوی قرار دے چکی ہے۔

متعلقہ خبریں