إنا لله وإنا إليه راجعون: پشاور میں خوفناک دھماکہ ۔۔۔ 17 افراد کے جاں بحق ہونے کی اطلاعات موصول

2019 ,مئی 8



پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) خیبر پختون خوا کے شہر پشاور میں ایک چکی میں دھماکے کے بعد آگ بھڑک اٹھی.پشاور کے علاقے واحد گڑھی میں چکی میں لگنے والی آگ سے 17 افراد بری جھلس گئے.ریسکیو ذرائع کے مطابق اس سانحے میں بچوں کی بڑی تعداد متاثر ہوئی ہے، زخمیوں کولیڈی ریڈنگ اسپتال منتقل کردیا گیا. عینی شاہدین کے مطابق آگ دھماکے کی نتیجے میں لگی، جو ممکنہ طور پر چکی میں گیس بھرنے کی وجہ سے ہوا۔جھلسنے والے بچوں کی اکثریت چکی کے پاس کھیل رہی تھی، اس دوران دھماکے سے آگ لگی اور بچے اس کی لپیٹ میں آگئے.خیال رہے کہ گزشتہ روز کراچی کے علاقے گلستان جوہر میں واقع ڈپارٹمنٹل اسٹور میں آگ لگ گئی تھی، جس پر اٹھارہ گھنٹے گزرنے کے بعد آج قابو پایا گیا۔نجی ڈپارٹمنٹل اسٹور میں لگنے والی ہولناک آگ کئی گھنٹے قبل بھڑکتی رہی، کروڑوں روپے کی اشیاء جل کر خاکستر ہوگئیں۔چیف فائر افسر کا کہنا تھا کہ نجی اسٹور میں ہونے والے آتشزدگی کی وجوہات تاحال سامنے نہیں آسکی ہیں، ضلعی انتظامیہ کے مطابق بیسمنٹ کو پارکنگ کے لیے الاٹ کیا گیا تھا، لیکن اسٹور انتظامیہ نے بیسمنٹ کو تجارتی مقاصد کے لیے استعمال کیا۔ دوسری جانب ایک افسوسناک خبر یہ تھی کہ داتا دربار کے باہر خودکش دھماکے میں 4 پولیس اہلکاروں سمیت 10 افراد شہید اور 26 زخمی ہوگئے۔دھماکا داتا دربار کے گیٹ نمبر دو کے باہر ہوا ، حملے میں 7 کلو گرام دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا ، حملہ آور کی عمر 15 سال کے قریب تھی جو فروٹ کی دکان سے نکلا اور ایلیٹ فورس کی گاڑی کو ٹارگٹ کیا۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کہنا ہے کہ سیف سٹی کیمروں کی ریکارڈنگ سے صورت حال کا خود جائزہ لیا ہے ، جلد دہشت گردوں کا پتا لگا لیں گے ۔صبح تقریباً 8 بجکر 54 منٹ پر پورا علاقہ خوفناک دھماکے سے گونج اٹھا، بارود کا شعلہ لپکا اور ہر طرف سیاہ دھویں کے بادل چھاگئے۔داتا دربار کو پہلی بار دہشت گردی کا نشانہ نہیں بنایا گیا، اس سے پہلے جولائی 2010 میں دو خود کش حملہ آوروں نے دربار کے احاطے میں داخل ہوکر اپنے آپ کو دھماکے سے اڑا دیا تھا، واقعے میں 42 افراد جان سے گئے تھے اور تقریباً 150 زخمی ہوئے تھے۔دھماکے کی اطلاع ملتے ہی پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار موقع پر پہنچے اور علاقے کو گھیرے میں لیتے ہوئے زخمیوں کو فوری طبی امداد کے لیے قریبی میو اسپتال منتقل کیا گیا۔دھماکے کے بعد میو اور جنرل اسپتال میں ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے فوری طور پر ڈاکٹروں اور اضافی عملے کو طلب کرلیا گیا۔ڈی آئی جی آپریشنز محمد اشفاق کے مطابق ایلیٹ فورس کے اہلکار داتا دربار کے گیٹ نمبر 2 پر فرائض انجام دے رہے تھے جنہیں 8 بجکر 45 منٹ پر نشانہ بنایا گیا۔آئی جی پنجاب کیپٹن (ر) عارف نواز خان اور ڈپٹی کمشنر لاہور صالح سعید نے تصدیق کی کہ دھماکا خودکش حملہ تھا جس کا ہدف ایلیٹ فورس کے اہلکار تھے۔ اور اب یہ خبر آئی ہے کہ خیبر پختون خوا کے شہر پشاور میں ایک چکی میں دھماکے کے بعد آگ بھڑک اٹھی.پشاور کے علاقے واحد گڑھی میں چکی میں لگنے والی آگ سے 17 افراد بری جھلس گئے.ریسکیو ذرائع کے مطابق اس سانحے میں بچوں کی بڑی تعداد متاثر ہوئی ہے، زخمیوں کولیڈی ریڈنگ اسپتال منتقل کردیا گیا. جس کے بعد علاوے میں سوگ کا سماں ہے۔

متعلقہ خبریں