مشکل وقت میں سعودیہ ایک بار پھر پاکستان کی مدد کو آن پہنچا۔۔۔۔ سب سے بڑی مشکل حل کر دی

2019 ,مئی 23



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ڈالر ذخیرہ کرنے والوں کی امیدوں پر پانی پھر گیا، پاکستان کے مشکل معاشی حالات میں سعودی عرب ایک مرتبہ پھر سے پاکستان کی مدد کرنے کو تیار ہو گیا۔ نجی ٹی وی کے مطابق سعودی عرب نے پاکستان کو تین ارب ڈالر کا تیل دینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ اس ضمن میں پاکستان اور سعودی عرب کے مابین اعلیٰ سطح کے رابطے ہونا شروع ہو گئے۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان کو اس حوالے سے اہم پیش رفت سے آگاہ کر دیا گیا ہے۔ تیل کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے باعث درآمدی بل میں اضافہ ہوا۔ رواں مالی سال میں پاکستان 10 ارب ڈالر کا تیل برآمد کر چکا ہے۔ دونوں ممالک کے حکام تیل کی ادھار ادائیگی کا طریقہ کار طے کر چکے ہیں۔واضح رہے کہ سعودیہ اس سے پہلے بھی کئی بار پاکستان کی مدد کرچکا ہے۔خیال رہے کہ اکستان کے وزیرِ اطلاعات غلام سرور نے بتایا کہ محمد بن سلمان کے دورے کے دوران پاکستانی شہر گوادر میں سعودی کمپنی آرامکو کے ایک جدید ترین پیٹروکیمکل کامپلیکس بنانے کے حوالے سے معاہدوں پر بھی دستخط کیے جائیں گے۔اس کے علاوہ اخبار خلیج ٹائمز سے بات کرتے ہوئے پاکستانی وزیرِ اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ سعودی عرب میں فیوچرسٹک شہر نیوم کی تعمیر کے لیے پاکستان افرادی قوت بھی فراہم کرے گا۔ نیوم سٹی کا اعلان محمد بن سلمان نے گذشتہ سال کیا تھا اور 500 ارب ڈالر کی مدد سے یہ ایک جدید ترین شہر تعمیر کیا جائے گا جس کی تعمیر سنہ 2025 تک مکمل ہونا ہے۔ وزارت داخلہ کے ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا تھا کہ شہزادہ محمد بن سلمان اور ان کے وفد میں شامل افراد کی سکیورٹی کے لیے چار سطح پر مشتمل سکیورٹی پلان ترتیب دیا گیا ہے۔ وزارت داخلہ کے اہلکار کے مطابق سعودی ولی عہد کی سکیورٹی کے لیے تین ہزار سے زیادہ اہلکار تعینات ہوں گے۔

متعلقہ خبریں