’’ بھائی صاحب ! مریم کو سمجھائیں یہ بہت تیز چلنا شروع ہوگئی ہے ۔۔۔‘‘ اڈیالہ جیل میں مریم نواز اور شہباز شریف میں کس بات پر جھگڑا ہوگیا؟

2019 ,جولائی 6



لاہور ( مانیٹرنگ ڈیسک ) گزشتہ دنوں مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز اوراپوزیشن لیڈر اور صدر مسلم لیگ ن شہباز شریف نے کوٹ لکھپت جیل میں سابق وزیراعظم نواز شریف سے ملاقات کی۔ معروف صحافی چوہدری غلام حسین نے دعویٰ کیا ہے کہ اس ملاقات کے دوران مریم نواز اور شہباز شریف کے درمیان تلخ کلامی ہوئے ہے۔ سینئیر صحافی کے مطابق مریم نواز نے بار بار شہباز شریف سے اختلاف کیا جس پر دونوں چچا بھتیجی میں تلخ کلامی ہوئی۔انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے نواز شریف سے کہا کہ مریم نواز کو سمجھائیں یہ بہت تیز چل رہی ہیں، انہیں کہیں کہ آہستی چلیں۔ سابق وزیراعظم نواز شریف نے اس پر دونوں کو سمجھاتے ہوئے کہا کہ یہ آپس میں جھگڑنے کا وقت نہیں ہے، پہلے مل کر ان تمام مسائل سے نبٹیں جو آج کل ہمیں گھیرے ہوئے ہیں۔خیال رہے کہ بہت عرصے سے خبریں آرہی ہیں کہ شہباز شریف نے مریم نواز کو پارٹی لیڈر کے طور پر قبول نہیں کیا اور مریم نواز شہباز شریف کو وہ مقام دینے کو تیار نہیں جو وہ چاہتے ہیں۔اس حوالے سے کئی بار خبریں آتی رہی ہیں کہ دونوں چچا بھتیجی میں اختلافات پائے جاتے ہیں۔ مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے بھی آج کی پریس کانفرنس پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہ آج پریس کانفرنس میں شہباز شریف بے بس نظر آئے ۔ انہوں نے کہا کہ شہباز شریف پوری پریس کانفرنس میں اس ویڈیو یا ارشد ملک کے حوالے سے کچھ نہ بولے اور وہ ضمیر کے قیدی نظر آئے۔خیال رہے کہ آج پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدرمریم نواز احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی ویڈیو سامنے لے کر آئیں جس میں احتساب عدالت کے جج کی ویڈیو نوازشریف کے چاہنے والے ن لیگی ناصر بٹ ے بنائی،ویڈیو میں جج صاحب تسلیم کررہے ہیں کہ میں بہت پریشان ہوں، میں نے ظلم کیا، میرا ضمیرمجھے جھنجھوڑ رہا ہے،جج صاحب نے ناصر بٹ کو خود گھر بلا کر ثبوت پیش کیے کہ نوازشریف بے قصور ہے۔

متعلقہ خبریں