سبحان اللہ۔۔۔ وزیر اعظم عمران خان نے مدینہ منورہ میں ایسا کام کر دکھایا کہ پوری قوم کا سر فخر سے بلند ہوگیا

2019 ,مئی 30



مدینہ منورہ (مانیٹرنگ ڈیسک )وزیر اعظم عمران خان کی سخت سکیورٹی حصار میں مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم میں آمد ، وزیر اعظم نے ریاض الجنہ میں نوافل ادا کئے اور روضہ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی خصوصی زیارت کی ، ا س موقع پر وزیر اعظم نے پاکستانیوں کو مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے احترام میں نعرے لگانے سے روک دیا ۔دنیا نیوز کے مطابق مدینہ پہنچنے پر وزیر اعظم عمران خان کو سپیشل سکیورٹی کے حصار میں مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم لایا گیا ، وزیراعظم کو دیکھ کر پاکستانیوں کی ایک بڑی تعداد ان کے گرد جمع ہوگئی اور نعرے لگانے شروع کردیئے جس پر عمران خان نے پاکستانیوں کو مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے احترام میں نعرے لگانے سے روک دیا ۔وزیر اعظم عمران خان نے ریاض الجنہ میں نوافل ادا کئے اور خصوصی زیارت کی ، اس موقع پر وزیر اعظم عمران خان کیلئے روضہ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے دروازے کھول دیئے گئے ، وزیر اعظم نے خصوصی زیارت کی اور افطار بھی مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم میں ہی کیا ۔واضح رہے وزیراعظم عمران خان سعودی عرب کے 3روزہ دورے پر مدینہ منورہ پہنچ گئے ہیں۔وزیراعظم عمران خان سعودی عرب میں 14ویں اسلامی سربراہی کانفرنس میں پاکستان کی نمائندگی کریں گے۔ اسلامی سربراہی کانفرنس کا اجلاس کل خادم الحرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز السعود کی سربراہی میں ہوگا۔ وزیراعظم آج مدینہ منورہ پہنچنے پر روزہ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم پر حاضری دی۔وزیراعظم مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم میں نوافل ادا کرنے کے بعد جدہ روانہ ہو گئے ہیں۔سینئر تجزیہ کار اور صحافی حامد میر کا کہنا ہے کہ اوآئی سی ممالک کے سربراہان مسلمانوں کے مقدس مقام پر اکٹھے ہورہے ہیں، اجلاس میں بڑی حکمت علی طے کی جائے گی۔ اس حوالے کچھ قرارداد بھی تیار کی گئی ہیں۔ان قراردادوں کا تعلق مسلم ممالک کے مسائل سے جڑا ہوا ہے۔وزیراعظم عمران خان اجلاس کے موقع پر اسلامی سربراہان مملکت سے ملاقاتیں بھی کریں گے۔بتایا گیا ہے کہ 27رمضان المبارک کو بہت سے اہم ممالک کے سربراہان اکٹھے عمرہ کی سعادت بھی حاصل کریں گے۔دوسری جانب وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ وزراء خارجہ کونسل کے اجلاس کے بعد سربراہ سطح کا اجلاس (آج) ہو گا۔ وزیراعظم عمران خان اجلاس میں شرکت اور اس موقع پر مختلف ملکوں کے رہنماؤں سے ملاقاتیں ہوں گی۔ سربراہ اجلاس کا ایجنڈا طے کر لیا ہے اور اوآئی سی وزراء خارجہ نے اس کی منظوری دیدی ہے۔جمعرات کو جدہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ نے کہا کہ جمعرات کو دو بہت اہم نشستیں ہوئی ہیں، ملائیشیاء کے وزیر خارجہ کے ساتھ ملاقات بہت مفید رہی۔ ملائیشیاء کے وزیر خارجہ سے ملاقات میں چار شعبہ جات اور فوکل پرسنز کی نشاندہی کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم ملائیشیاء ڈاکٹر مہاتیر محمد کے دورے کے بعد دونوں ممالک کے تعلقات بڑھانے میں یہ اہم ثابت ہوں گے۔ملائیشیا، ترکی اور پاکستان کے وزراء خارجہ اور وزارت خارجہ کے افسران کا الگ اجلاس ہوا۔ اس نشست میں او آئی سی میں اصلاحات، اسلام فوبیا سمیت دیگر اہم موضوعات پر اہم تبادلہ خیال ہوا۔ اجلاس میں تینوں ممالک نے او آئی سی اور اقوام متحدہ کے فورم پر مل کر کیسے کام کرنا ہے اس پر غور کیا گیا۔ ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں وطن واپس لوٹ رہا ہوں، وزیراعظم ان باتوں کو آگے لے کر چلیں گے۔

متعلقہ خبریں