’پاک فوج کا کوئی جوان وزیرستان سے زندہ واپس نہیں جائے گا‘ محسن داوڑ کی ہرزہ سرائی

2019 ,مئی 29



اسلام آباد (مانیٹرنگ رپورٹ) شمالی وزیرستان میں پاک فوج کی چیک پوسٹ پر حملہ کرکے فرار ہونے والے محسن داوڑ کی ریاستی اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کا سلسلہ جاری ہے۔ پشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) کے مرکزی رہنما اور رکن قومی اسمبلی نے تین روز قبل مسلح افراد کے ہمراہ شمالی وزیرستان میں پاک فوج کی خر کمر چیک پوسٹ پر حملہ کیا تھا ۔ اس حملے میں پاک فوج کے پانچ جوان زخمی ہوئے جبکہ جوابی کارروائی میں پی ٹی ایم کے تین کارکن مارے گئے اور 10 زخمی ہوئے۔ مذکورہ حملے کے بعد رکن قومی اسمبلی علی وزیر کو ساتھیوں سمیت گرفتار کرلیا گیا جبکہ محسن داوڑ فرار ہوگئے۔

    چیک پوسٹ پر حملے کے بعد فرار ہونے والے محسن داوڑ کی پاک فوج کے خلاف ہرزہ سرائی کا سلسلہ مسلسل جاری ہے۔ اپنے ایک حالیہ بیان میں محسن داوڑ نے دھمکی دی ہے کہ پاک فوج وزیرستان سے چلی جائے ورنہ کوئی جوان وزیرستان سے زندہ واپس نہیں جائے گا۔ نجی ٹی وی کا کہنا ہے کہ محسن داوڑوزیرستان میں لوگوں کوپاک فوج کیخلاف اکسا رہاہے اور غیر ملکی میڈیاکو مسلسل انٹرویو دے رہا ہے، غیرملکی میڈیا ایک ایجنڈے کے تحت پاکستان مخالف خبریں چلارہاہے۔

    متعلقہ خبریں