بلاول بی بی شہید کا بیٹا ہے، انگاروں پر چلے گا۔۔۔ آصف زرداری عید کے بعد حکومت کو کیا سرپرائز دینے والے ہیں؟ بڑی وارننگ جاری کر دی گئی

2019 ,مئی 15



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیرمین آصف زرداری نے رمضان کے بعد حکومت مخالف تحریک چلانے کا اعلان کردیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق آصف علی زرداری کا کہنا ہے کہ حکومت مخالف تحریک پارلیمنٹ نہیں سڑکوں پر چلائیں گے۔ انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نیب اور معیشت ایک ساتھ نہیں چل سکتیں۔ بلاول بی بی شہید کا بیٹا ہے انگاروں پر چلے گا۔ماضی اور موجودہ ایمنسٹی سکیم میں کوئی فرق نہیں۔ خیال رہے آج ق اسلام آبادہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق اورجسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل ڈویژن بینچ نے جعلی اکاﺅنٹس کیس میں آصف زرداری کی 7 اور فریال تالپورکی 3 درخواستوں پر سماعت کی‘آصف زرداری،فریال تالپور ضمانت میں توسیع کے لیے چوتھی بار عدالت میں پیش ہوئے. عدالت نے آصف زرداری کی 2 درخواستوں پر عبوری ضمانت 22مئی تک منظور کرتے ہوئے نوٹس جاری کردیئے اور آصف زرداری کو5،5لاکھ کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا.اسلام آباد ہائی کورٹ نے اوپل 225 انکوائری میں بھی آصف زرداری کی عبوری ضمانت 12جون منظور کرلی ، ضمانت 5لاکھ روپے کے مچلکوں کے عوض منظور کی گئی. وکیل فاروق ایچ نائیک نے کہا نئے نئے طلبی کے نوٹسز آرہے ہیں، جس پر جسٹس عامرفاروق نے ریمارکس دیئے کہ لگتاہے طلبی اورضمانتوں کاسیلاب آرہا ہے‘پارک لین کیس میں بھی آصف زرداری کی ضمانت میں12جون تک توسیع کردی گئی. جعلی اکاﺅنٹس کیس میں نیب کے طلبی نوٹس پر سابق صدر آصف زرداری اورفریال تالپور کی عبوری ضمانت آج ختم ہورہی تھی. دوسری جانبآصف زرداری نے وکیل کے ذریعے ضمانت قبل از گرفتاری کے لیے مزید 2درخواستیں دائر کیں تھیں جبکہ نیب کی جانب سے دو مزید کال اپ نوٹس جاری کیے گئے تھے، آصف علی زرداری کی پیشی کال اپ نوٹس کے مطابق کل ہے. گذشتہ روز جعلی اکاﺅنٹس کیس میں پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری کی درخواست ضمانت پر نیب نے اپنا تحریری جواباسلام آباد ہائی کورٹ میں جمع کرایا تھا ، نیب کا تحریری جواب 11 صفحات پر مشتمل ہے، جس میں آصف علی زرداری کی منی لانڈرنگ اوردیگر کیسز سے متعلق جامع رپورٹ رجسٹرار آفس میں جمع کرائی تھی۔دوسری جانب پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین اور سابق صدر مملکت آصف زرداری نے تحریک انصاف کی وفاقی حکومت کیخلاف طبل جنگ بجا دیا ہے پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین کا کہنا ہے کہ کوشش تھی کہ اس حکومت کو وقت دیا جائے، لیکن اب ایسا ممکن نہیں رہا۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے سابق صدر مملکت آصف زرداری نے تحریک انصاف کی وفاقی حکومت کیخلاف طبل جنگ بجا دیا ہے ، آصف زرداری نے قومی اسمبلی میں ان ہاوس تبدیلی کا عندیہ دیا ہے ، اس حکومت کو وقت دیا جائے ، لیکن اب ایسا ممکن نہیں رہا ، موجودہ حکومت کو مزید وقت نہیں دیں گے ، آصف زرداری کا یہ بیان اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کی گرفتاری کے بعد سامنے آیا ، دوسری جانب پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئر مین سابق صدر آصف علی زرداری نے واضح کیا ہے کہ بھارت نے کچھ بھی جارحانہ قدم اٹھایا تو پوری قوم ایک ساتھ فوجی جوانوں کے شانہ بشانہ کھڑی ہوگی، تحریک انصاف کی حکومت کے بعد پاکستان دنیا میں مزید تنہا ہوچکا ہے ، بھارت کا ڈٹ کر مقابہلہ کرینگے آصف علی زرداری کا کہنا ہے کہ جب وہ صدر تھے تب بھی پلوامہ جیسا واقعہ ہوا تھا اور ہم نے دنیا کو اپنے ساتھ رکھ کر ممبئی حملے جیسے واقعے کا سامنا کیا اور سفارتی سطح پر اسے ہینڈل کیا۔انہوں نے موجودہ حکومت نابالغ قرار دیا اور کہا کہ موجودہ حالات میں نابالغ حکومت کو سمجھ نہیں آرہی کہ کرنا کیا ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ بھارت نے کچھ بھی جارحانہ قدم اٹھایا تو پیپلزپارٹی کے کارکن، عوام فوجی بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہوں گے اور بھارت کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے ، بھارت کی جانب سے پاکستان دنیا میں تنہا کرنے کی کوششوں کا ذکر کرتے ہوئے آصف علی زرداری نے کہا کہ پاکستان کئی سالوں سے دنیا میں تنہا ہوچکا ہے ، اور تحریک انصاف کی حکومت کے بعد پاکستان دنیا میں مزید تنہا ہوچکا ہے ، کشمیر کی صورتحال پر گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اپنے دور میں پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلایا تھا ، بھارت ہم پر حملے کی جرات نہیں کرسکتا ، اگر کیا تو منہ توڑ جواب دیں گے۔ ہر دور میں پیپلز پارٹی کو اپنوں نے ہی دغا دیا، ہمارے رہنماؤں کی گرفتاریاں کوئی نئی بات نہیں۔ انہوں نے کسی کی نشاندہی کیے بغیر کہا کہ بلاول بھٹو، بے نظیر بھٹو کا بیٹا ہے تم اس کو کیا ڈراؤ گیڈراؤ انھیں جنھوں نے کبھی جیل نہیں دیکھی۔انہوںنے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ ہم چاہتے ہیں یہ سیکھیں اورکام کریں، ایسا نہیں ہے کہ ہم طاقت کے پیچھے بھاگ رہے ہیں، ہم چاہتے تھے موجودہ حکومت چلے اور لوگوں کے مسائل حل کرے۔ایک سوال کے جواب میں آصف علی زرداری نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن کے قدم کے ساتھ قدم بڑھائیں گے۔

متعلقہ خبریں