مہلت گزری گئی ۔۔۔۔۔ علیمہ خان کے حوالے سے آنے والی خبر نے پوری تحریک انصاف کو تشویش میں مبتلا کر دیا

2019 ,فروری 8



اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک ) ایف بی آر نے ٹیکس ادائیگی کیلئے 7 فروری تک مہلت دی تھی ، علیمہ خان نے 13 جنوری کو 73 لاکھ روپے کی ادائیگی کی ، انہوں نے بقایا 2 کروڑ 21 لاکھ کی رقم تاحال ادا نہیں کی ، علیمہ خان نے بقایا ٹیکس کی ادائیگی کیلئے 21 جنوری تک مہلت مانگی تھی . ایف بی آر نے ٹیکس ادائیگی کیلئے 7 فروری تک مہلت دی تھی ، علیمہ خان نے 13 جنوری کو 73 لاکھ روپے کی ادائیگی کی ، انہوں نے بقایا 2 کروڑ 21 لاکھ کی رقم تاحال ادا نہیں کی ، علیمہ خان نے بقایا ٹیکس کی ادائیگی کیلئے 21 جنوری تک مہلت مانگی تھی ، بعد میں ایف بی آر نے 21 جنوری کے بعد 7 فروری کے لئے ٹیکس ادائیگی کا نوٹس دیا تھا علیمہ خان نے دبئی میں 28 لاکھ 78 ہزار درہم سے زائد مالیت کا فلیٹ خریدا تھا , ایف بی آر نے علیمہ خان پر ٹیکس اور جرمانہ کی مد میں 2 کروڑ 94 لاکھ 15 ہزار 600 روپے عائد کئے تھے ، علیمہ خان نے جرمانہ اور ٹیکس کی کل رقم کا 25 فیصد ادائیگی کر دی تھی , ایف بی آر نے علیمہ خان کو فلیٹ چھپانے پر 100 فیصد جرمانہ عائد کیا تھا ، علیمہ خان نے 2 کروڑ 21 لاکھ روپے کی قسطوں میں ادائیگی کیلئے چیئرمین ایف بی آر کو درخواست بھی دی تھی ، اقساط کے حوالے سے ایف بی آر کی جانب سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ، علیمہ خان نے دبئی میں 28 لاکھ 78 ہزار درہم سے زائد مالیت کا فلیٹ خریدا تھا، جس پر ایف بی آر نے علیمہ خان پر ٹیکس اور جرمانہ کی مد میں 2 کروڑ 94 لاکھ 15 ہزار 6 سو روپے عائد کئے تھے ، وزیراعظم عمران خان کی بہن علیمہ خان نے جرمانہ اور ٹیکس کی کل رقم کا 25 فیصد ادا کر دیا تھا ، جبکہ بقیہ ٹیکس کی ادائیگی مقرر کردہ تاریخ گزر جانے کے بعد بھی نہ کی۔ ایف بی آرنے علیمہ خان کو 7 فروری تک ٹیکس ادا نہ کیا تو اکاؤنٹس منجمد کرکے ریکوری مکمل کی جائے گی ،

متعلقہ خبریں