ملکی معیشت کے لیے بُری خبر۔۔۔ ڈالر153 روپے کا ہوگیا

2019 ,جون 13



کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں ایک مرتبہ پھر سے اضافہ ہو گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق آج کے روز انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں مجموعی طور پر 1 روپے 44 پیسے کا اضافہ ہوا جس کے بعد ڈالر مزید مہنگا ہو کر ملکی تاریخ میں بلند ترین سطح 153 روپے پر جا پہنچا۔ فاریکس ڈیلرز کے مطابق انٹر بینک میں ڈالر نئی بلند ترین سطح 153 روپے پر جا پہنچا۔قبل ازیں آج صبح انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں 53 پیسے کا اضافہ ہوا تھا ، جس کے بعد ڈالر 152 روپے 10 پیسے پر ٹریڈ کرتا رہا۔ تاہم اب یہ اضافہ مجموعی طور پر ایک روپیہ 44 پیسے ہو گیا ہے جس کے بعد ڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے۔ گذشتہ چار روز میں انٹر بینک میں ڈالر 4 روپے 23 پیسے مہنگا ہوچکا ہے۔انٹر بینک میں ڈالر چار روز میں 148.87 سے بڑھ کر 153 روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔مارکیٹ ذرائع کے مطابق گذشتہ ہفتے سات روز تک مسلسل تعطیلات اور مارکیٹ بند ہونے سے حکومت پر نہ صرف ادائیگیوں کا بوجھ بڑھ گیا بلکہ ڈالر کی قیمت میں بھی اضافہ ہوا۔ عید کی تعطیلات اور ہفتہ وار بندش کی وجہ سے مجموعی طور پر سات روز کے بعد بینکوں میں لین دین کا آغاز ہوا تو ہفتے کے پہلے ہی روز ڈالر کی طلب و رسد میں فرق نظر آیا جس کی وجہ سے انٹر بینک اور اوپن مارکیٹ میں عارضی اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔ماہرین معیشت کا کہنا ہے کہ ڈالر کی اونچی اُڑان اس بات کی گواہی دے رہی ہے کہ عوام پر مہنگائی کا بوجھ مزید بڑھنے والا ہے۔ جبکہ عوام کا کہنا ہے کہ ڈالر کی بڑھتی ہوئی قیمت سے ہونے والی مہنگائی کا سارا ملبہ ہمارے اوپر آ جاتا ہے۔ حکومت کو چاہئیے کہ پیسے کی قدر کو مستحکم کرنے کے لیے اقدامات کرے تاکہ عام آدمی کو مزید مہنگائی کا بوجھ نہ اُٹھانا پڑے۔

متعلقہ خبریں