رات کی بڑی بریکنگ نیوز: اچانک گیم پلٹ گئی ۔۔۔۔ جیل انتظامیہ کا نواز شریف کو وصول کرنے سے انکار

2019 ,مئی 7



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کی کوٹ لکھپت جیل آمد سے قبل ہی جیل کا لاک اپ بند کر دیا گیاہے۔ نجی ٹی وی چینل جیو نیوز نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ سابق وزیر اعظم میاں نوازشریف جنھیں دوبارہ کوٹ لکھپت جیل چھ بجے تک پہنچ جانے کی ہدایات کی گئی تھیں ۔ اپنے مقررہ وقت پر جیل نہیں پہنچ سکے ، جس کے بعد جیل حکام نے کوٹ لکھپت جیل کا لاک اپ بند کر دیاہے۔اور بتایا جا رہا ہے کہ محکمہ داخلہ کے خصوصی احکامات کا انتظار کیاجا رہا ہے۔ سابق وزیراعظم میاں نوازشریف ضمانت میں توسیع کی درخواست مسترد ہونےکے بعدایک بارپھر جاتی امرا سے کوٹ لکھپت جیل منتقلی کےلئے روانہ ہو گئے ۔ سابق وزیراعظم کی گاڑی حمزہ شہباز چلا رہے ہیں جبکہ مریم نواز بھی اپنے والد کے ہمراہ ہیں۔ واضح رہے کہ سابق وزیر اعظم میاں نوازشریف کو بیماری کی بنا پر چھ ہفتوں کی ضمانت پر رہا کر دیا گیا تھا جس کے بعد ان کی ضمانت میں توسیع کی درخواست دی گئی تھی جسے عدالت نے مسترد کر دیا تھا۔ واضح رہے کہ کوٹ لکھپت انتظامیہ نے سابق وزیراعظم کو چھ بجے تک جیل پہنچنے کی ہدایات کر دی تھیں تاہم نواز شریف تاحال جیل نہیں پہنچ سکے۔ یاد رہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف جاتی امرا سےکوٹ لکھپت جیل کے لئے روانہ ہوئے ، ، نواز شریف کےساتھ مریم نوازبھی گاڑی میں سوار تھیں ،نواز شریف کی گاڑی حمزہ شہباز چلا رہے تھے،ادھر کوٹ لکھپت جیل کا لاک اپ بندکردیا گیا ہے، جیل ذرائع نواز شریف کو اب جیل انتظامیہ وصول نہیں کرےگی، اسسٹنٹ سپرنٹڈنٹ جیل جاتی امرا میں لیٹر دی کر چلےگئے۔ جیل انتظامیہ کے مطابق اب محکمہ داخلہ پنجاب کےخصوصی احکامات کاانتظا رہے۔موصولہ اطلاعات کے مطابق کوٹ لکھپت جیل کےداخلی راستوں پر پولیس کا سخت پہرہ ہے، پولیس نےکوٹ لکھپت جیل کاداخلی راستہ مکمل طورپر بندکر دیا، امن وامان کی صورتحال برقرار رکھنےکے لئےجیل کےباہر جیمرز لگائےگئے ہیں۔ دوسری جانب ایک خبر یہ بھی ہے کہ وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی نہیں ہوگی۔وزیر اعظم کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس منعقد ہوا، وزیر اعظم نے ایک بار پھر وفاقی کابینہ اجلاس میں کرپشن کے خاتمے پر زور دیا۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی نہیں ہوگی، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں سے متعلق ای سی سی کا فیصلہ برقرار رہے گا۔کابینہ اجلاس میں وزیر اعظم نے ایک بار پھر کرپشن کے خاتمے پر زور دیا، انھوں نے کہا کہ کرپشن پر کوئی سمجھوتا نہیں ہوگا، چوروں اور لٹیروں کو نہیں چھوریں گے۔وزیرِ اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ کم زور معیشت وراثت میں ملی ہے، معیشت میں بہتری کے لیے اہم فیصلے کیے ہیں۔وزیر اعظم نے ہدایت کی کہ وزرا سحر و افطار میں غریبوں کا خیال رکھیں، مصنوعی مہنگائی اور ذخیرہ اندوزوں پر نظر رکھی جائے۔دریں اثنا، وفاقی کابینہ اجلاس میں وزیر اعظم نے وفاقی وزرا کو مزید اختیارات دینے کا بھی فیصلہ کیا، تاہم اس سلسلے میں وفاقی وزرا کو مزید با اختیار بنانے کے لیے اہم فیصلے چند روزمیں کیے جائیں گے۔وزیر اعظم نے کل قومی اسمبلی کے اجلاس میں بھی شرکت کا فیصلہ کیا، عمران خان نے پی ٹی آئی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس بھی کل طلب کر لیا، یہ اجلاس کل دوپہر پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوگا۔

متعلقہ خبریں