انگلینڈ سے ورلڈکپ واپس لینے اور فائنل کا نتیجہ تبدیل کرنے کا مطالبہ، آئی سی سی نے طویل غور و فکر کے بعد دھماکہ خیز فیصلہ سنا دیا

2019 ,جولائی 27



دبئی (مانیٹرنگ ڈیسک) انگلینڈ سے ورلڈکپ واپس لینے اور فائنل کا نتیجہ تبدیل کرنے کا مطالبہ، آئی سی سی نے طویل غور و فکر کے بعد فیصلہ سنا دیا، کرکٹ کی گورننگ باڈی نے ورلڈکپ کے تاریخی فائنل میں ایمپائر کی غلطی کو نظرانداز کرتے ہوئے 1 رن زائد دینے کے فیصلے کی حمایت کر دی۔  آئی سی سی کی جانب سے کرکٹ ورلڈکپ کے فائنل کے متنازعہ نتیجے پر باقاعدہ ردعمل دیا گیا ہے۔14 جولائی کو لارڈز کے تاریخی کرکٹ گراونڈ پر کھیلے گئے ورلڈکپ 2019 کے تاریخی فائنل میں سری لنکن ایمپائر دھرماسینا کی غلطی کے باعث انگلینڈ کو اوور تھرو کا ایک زائد رن ملا تھا جو بعد ازاں انگلینڈ کی فتح کا باعث بنا۔ اس حوالے سے سری لنکن ایمپائر دھرماسینا نے بھی اپنی غلطی کا اعتراف کیا اور کہا کہ انہوں نے غلطی سے انگلینڈ کو اوور تھرو کا ایک رن زائد دے دیا۔ انگلینڈ سے ورلڈکپ واپس لینے اور فائنل کا نتیجہ تبدیل کرنے کا مطالبہ، آئی سی سی نے طویل غور و فکر کے بعد فیصلہ سنا دیا اس نتیجے کے بعد آئی سی سی کو اپنے مضحکہ خیز قوانین پر شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا، اور مطالبہ کیا گیا تھا ورلڈکپ فائنل کا نتیجہ تبدیل کیا جائے اور دونوں ٹیموں کو فاتح قرار دیا جائے۔ اب آئی سی سی نے اس تمام شور شرابے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ایمپائر دھرماسینا کے فیصلے کے ساتھ کھڑی ہے۔ سری لنکن ایمپائر دھرماسینا نے ورلڈکپ فائنل میں شدید دباو کے ماحول میں بہترین ایمپائرنگ کے فرائض سرانجام دیے۔آئی سی سی نے ورلڈکپ فائنل کی ٹرافی نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے درمیان مشترکہ طور پر تقسیم کرنے کا مطالبہ مسترد کر دیا ہے۔ یوں انگلینڈ ہی اگلے 4 سال کیلئے کرکٹ کا عالمی چیمپئن برقرار رہے گا۔ واضح رہے کہ انگلینڈ پہلی مرتبہ کرکٹ کا عالمی چیمپئن بننے میں کامیاب ہوا ہے۔

متعلقہ خبریں