بڑی خبر: پنجاب حکومت نے وزیراعظم کی کفایت شعاری پالیسی کی دھجیاں اُڑا دیں۔۔۔۔ ایسا کام کر دیا کہ کہ کپتان بھی سوچتے رہ گئے

2019 ,مئی 29



ویب ڈیسک (مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب حکومت نے وزیراعظم عمران خان کی کفایت شعاری پالیسی کی دھجیاں اُڑا دیں، 20 نئی گاڑیاں خریدنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔ ذرائع کے مطابق پنجاب حکومت نے 20 نئی گاڑیاں خریدنے کا فیصلہ کر لیا، 20 سنگل کیبن ٹیوٹا ڈالے واسا افسران کے نام پر خریدے جائیں گے، پنجاب کی سب کابینہ نے گاڑیوں کی خریداری کی بھی منظوری دیدی ہے۔اس سے قبل سادگی اور کفایت شعاری مہم کے تحت وزیر اعظم ہاؤس میں گاڑیوں کی بولی کا عمل مکمل ہوگیا جس کے دوران 102 میں سے 61 گاڑیاں نیلام کردی گئیں۔ایڈمنسٹریٹر وزیراعظم ہاؤس میجر آصف نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ جن گاڑیوں کی بولی نہیں لگی، ایف بی آر ان کی قیمتوں کا دوبارہ تعین کرے گا۔ انہوں نے بتایا کہ نیلامی کے لیے پیش کی گئی 102 گاڑیوں کی مالیت ایک ارب روپے سے زائد تھی۔میجر آصف کے مطابق 61 گاڑیوں کی نیلامی سے تقریبا 20 کروڑ روپے حاصل ہوئے۔انہوں نے کہا کہ امید تھی بم پروف گاڑی کی بولی 16 کروڑ سے اوپر جائے گی، دو بم پروف گاڑیوں میں سے کوئی نیلام نہیں ہوئی۔ایڈمنسٹریٹر وزیراعظم ہاؤس کا کہنا تھا کہ27 لگڑری اور بلٹ پروف گاڑیوں میں سے 7 کی نیلامی ہوئی۔مجموعی طور پر وزیراعظم ہاؤس کے لیے کابینہ ڈویژن کے پاس 200 سے زائد گاڑیاں ہیں، جن میں سے 102 گاڑیاں پہلے مرحلے میں اور باقی آئندہ نیلام کی جائیں گی۔نیلام کی جانے والی کئی گاڑیاں وزیراعظم کے پروٹوکول جبکہ کئی غیر ملکی مہمانوں کے پروٹوکول کی ہیں۔اس حوالے سے سینیٹر فیصل جاوید کا کہنا ہے کہ عوام دیکھ رہے ہیں کہ ان کے ٹیکس کی رقم کہاں خرچ ہوتی رہی، اب یہ پیسہ واپس خزانہ میں جمع کرائیں گے۔واضح رہے کہ نیلامی کے لیے پیش کی گئی گاڑیوں میں سے 72 گاڑیاں 10 سال سے بھی پرانے ماڈل کی ہیں، ایک جیپ 32 سال پرانی ہے جبکہ کئی تو بالکل کھٹارا ہیں۔ سادگی اور کفایت شعاری مہم کے تحت وزیر اعظم ہاؤس میں گاڑیوں کی بولی کا عمل مکمل ہوگیا جس کے دوران 102 میں سے 61 گاڑیاں نیلام کردی گئیں۔ایڈمنسٹریٹر وزیراعظم ہاؤس میجر آصف نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ جن گاڑیوں کی بولی نہیں لگی، ایف بی آر ان کی قیمتوں کا دوبارہ تعین کرے گا۔

متعلقہ خبریں