افواہیں سچ ثابت ، شریف خاندان میں پھوٹ پڑ گئی

2019 ,اپریل 7



اسلام آباد (مانئٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے دعویٰ کیا ہے کہ شریف خاندان میں پھوٹ پڑ چکی ہے ،مسلم لیگ (ن)اور پیپلزپارٹی نے ملک کو لوٹاہے، ملکی معیشت کی بحالی کے لیے موجودہ حکومت کو آئی ایم ایف سے مالی امداد حاصل کرنی چاہیے۔ ایک انٹرویو میں انہوں نے کہاکہ شریف خاندان میں پھوٹ پڑ چکی ہے ۔انہوں نے کہاکہ معلوم نہیں حمزہ شہباز کس بات کے لیڈر بنے ہوئے ہیں۔شیخ رشید نے کہاکہ میرے گھر پولیس آتی تھی تو ساتھ جانے کیلئے بیگ پہلے سے تیار ہوتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر بھی غیر ملکی کاروبار واپس لانے اور ملکی اقتصادی سرگرمیوں کے فروغ کے لیے کوششیں کر رہے ہیں۔ عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے متعلق تبصرہ کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ ملکی معیشت کی بحالی کے لیے موجودہ حکومت کو آئی ایم ایف سے مالی امداد حاصل کرنی چاہیئے۔ ماضی کی حکومتوں کی ناقص پالیسیوں پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) اور پاکستان پیپلز پارٹی کی گزشتہ حکومتوں نے جس بے دردی سے ملکی خزانے کو لوٹا اس کی مثال نہیں ملتی۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیر اعظم عمران خان سے وزیر اطلاعات فواد چودھری نے ملاقات کی ، اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہاہے کہ پرویز مشرف نے حدیبیہ کیس میں شریف خاندان کو این آر او دیا،شریف فیملی کواین آراونہ ملتاتومنی لانڈرنگ ختم ہوجاتی۔ان کا کہنا تھا کہ منی لانڈرنگ کے تمام کیسزمیں حدیبیہ کیس کاماڈل استعمال کیاگیا، فرنٹ مینوں کے ذریعے پیسہ ملک سے باہربھیجااورواپس منگوایاگیا۔انہوں کے کہا کہ منی لانڈرنگ کیس کی تمام تفصیلات سے قوم کو آگاہ کیا جائے اور منی لانڈرنگ کرنے والوں کا اصل چہرہ عوام کے سامنے لایا جائے ، پچھلے دس سالوں میں لئے جانیوالے 60ارب ڈالر قرضے کا حساب لیا جانا چاہئے ، ان کی سیا ہ کاریوں کے نقصان سے ان لوگوں کوآگاہ کیا جائے جو آج مہنگائی اور قرضوں کی دلدل میں دھنسے ہوئے ہیں۔وزیر اعظم نے کہا کہ موجودہ حکومت نے بے نامی قانون کے تحت جو قوائد اور رولز بنائے ہیں اس سے منی لانڈرنگ پر قابو پانے اور دوسروں کے نام پر جائیدادیں رکھنے کی حوصلہ شکنی میں خاطر خواہ مدد ملے گی۔

متعلقہ خبریں