تحقیقات کا آغاز مجھ سے کریں :سینٹ میں ناکامی کے بعد اپوزیشن کے اجلاس میں کون سے رہنما جذباتی ہو گئے؟ ناقابل یقین خبر

2019 ,اگست 3



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک ) مسلم لیگ ن کی طرف سے منتخب سینیٹر حافظ عبدالکریم ن لیگ کے اجلاس کے دوران جذباتی ہوگئے ۔ شہباز شریف کے زیرصدارت سینیٹرز کے اجلاس میں انہوں نے کہا کہ مجھ پر شک کیا جا رہا ہے کہ میں نے صادق سنجرانی کے حق میں ووٹ دیا، تحقیقاتی کمیٹی تحقیقات کا آغاز مجھ سے کرے ، سینٹ کی رکنیت اور اپنی پارٹی کی نظامت سے استعفیٰ لکھ کر ساتھ لایا ہوں۔ سوشل میڈیا پرجاری فہرست میں میرا نام چل رہا ہے تو مجھے کوئی حق نہیں کہ سینٹ کا رکن یا پارٹی کا ناظم رہوں۔ مجھے بیرون ملک جانا ہے ، اسلئے کمیٹی تحقیقات کا آغاز مجھ سے کرے ۔ ن لیگ کے صدر شہباز شریف نے کہا آپ پر کوئی شک کررہا ہے نہ ہی یہ سوچ سکتے ہیں۔ کمیٹی آپ سے کبھی نہیں ملے گی، آپ آرام سے بیرون ملک جائیں ۔پارٹی ذرائع نے بتایا مسلم لیگ (ن)کے جن سینیٹرز نے صادق سنجرانی کوووٹ دیا ان کی شناخت کرناممکن نہیں لگ رہا کیونکہ ایک تو خفیہ رائے شماری ہوئی دوسرا کیمرہ اندر لے جانے کی اجازت بھی نہ تھی۔ صادق سنجرانی کو ووٹ کاسٹ کرنے والے تین سے پانچ لیگی سینیٹرز کے متعلق کنفرم ہے تاہم ان کے نام پارٹی قیادت صیغہ راز میں رکھے ہوئے ہے ۔ تحقیقاتی کمیٹی تحقیقات کا آغاز مجھ سے کرے ، سینٹ کی رکنیت اور اپنی پارٹی کی نظامت سے استعفیٰ لکھ کر ساتھ لایا ہوں۔ سوشل میڈیا پرجاری فہرست میں میرا نام چل رہا ہے تو مجھے کوئی حق نہیں کہ سینٹ کا رکن یا پارٹی کا ناظم رہوں۔ مجھے بیرون ملک جانا ہے ، اسلئے کمیٹی تحقیقات کا آغاز مجھ سے کرے ۔ ن لیگ کے صدر شہباز شریف نے کہا آپ پر کوئی شک کررہا ہے نہ ہی یہ سوچ سکتے ہیں۔ کمیٹی آپ سے کبھی نہیں ملے گی، آپ آرام سے بیرون ملک جائیں ۔پارٹی ذرائع نے بتایا مسلم لیگ (ن)کے جن سینیٹرز نے صادق سنجرانی کوووٹ دیا ان کی شناخت کرناممکن نہیں لگ رہا کیونکہ ایک تو خفیہ رائے شماری ہوئی دوسرا کیمرہ اندر لے جانے کی اجازت بھی نہ تھی۔ صادق سنجرانی کو ووٹ کاسٹ کرنے والے تین سے پانچ لیگی سینیٹرز کے متعلق کنفرم ہے تاہم ان کے نام پارٹی قیادت صیغہ راز میں رکھے ہوئے ہے ۔

متعلقہ خبریں