بین الاقوامی میڈیا پر انسانیت کا درس دینے والے مہندرا سنگھ دھونی بھی شرمناک عمل میں حصہ دار بن گئے

2019 ,جولائی 26



نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) ایک طرف بھارتی ٹیم کو ناقص کارکردگی دکھانے پر شدی تنقد کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے تو دوسری جانب بھارتی کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی کے خلاف بھی بھارتی ٹیم میں بغاوت شروع ہوگئی ہے۔ ایسے میں بھارتی وکٹ کیپر اور بیٹسمین ماہندرا سنگھ دھونی نے بھارتی فوج کو جوائن کر لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق مہندرا سنگھ دھونی کو کشمیر میں فوجی ذمہ داریاں انجام دینے کے لیے منتخب کر لیا گیا ہے ۔۔دھونی ریزرو فورس میں لیفٹیننٹ کرنل کے عہدے پر فائز اور 106 پارا ٹی اے بٹالین کے ہمراہ ڈیوٹی سر انجام دیں گے ۔ ان کی تقرری ایسے علاقے میں کی گئی ہے جہاں پر کئی دہائیوں سے بھارتی فوج نے قبضہ کررکھا رہے کشمیری عوام پر سر عام مظالم کے پہاڑ توڑے جا رہے ہیں۔ ایسے میں انٹرنیشنل میڈیا پر آکر بڑی بڑی باتیں کرنےاور انسانیت کا درس دینے والے مہندرا سنگھ دھونی کشمیر پر قابض فوج کے مظالم میں اپنا حصہ ڈالنے جارہے ہیں۔ بھارتی آرمی کے آفیشلز کے مطابق مہندرا سنگھ دھونی 31 جولائی سے 15 اگست تک کشمیر میں تعینات رہیں گے۔ اس دوران وہ پیٹرولنگ، گارڈ اور پوسٹ ڈیوٹیز انجام دیں گے۔ مجموعی طور پر دھونی نے فوج کے ساتھ 2 ماہ ذمہ داری انجام دینا ہے۔ یاد رہے کہ دھونی نے دورہ ویسٹ انڈیز سے دستبرداری اختیار کرتے ہوئے فوج میں ڈیوٹی انجام دینے کا فیصلہ کیا تھا۔ یاد رہے بھارتی کرکٹ ٹیم 14 فروری کو مقبوضہ کشمیر میں حملے میں ہلاک ہونے والے پیرا ملٹری فورس کے اہلکاروں اور مسلح افواج کے ساتھ اظہار یک جہتی کے لیے کیموفلاج کیپ پہن کر میدان میں اتری تھی۔بھارتی کرکٹ بورڈ (بی سی سی آئی) نے اپنی ٹویٹ میں کہا تھا کہ ‘بھارتی ٹیم پلوامہ دہشت گرد حملے میں ہلاک اور مسلح افواج کے ساتھ اظہار یک جہتی کے لیے کیموفلاج کیپ پہنے گی’۔اس پر رد عمل دیتے ہوۓ پاکستان کے وفاقی وزیراطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پراپنے بیان میں کہاتھا کہ ‘یہ کرکٹ نہیں ہے، میں امید کرتا ہوں کہ جینٹل مینز گیم کو سیاست کی نذر کرنے پر آئی سی سی کارروائی کرے گی’۔انہوں نے کہا کہ ‘اگر بھارتی کرکٹ ٹیم کو نہیں روکا گیا تو پاکستانی کرکٹ ٹیم کو کشمیر میں بھارتی مظالم کے حوالے سے دنیا کو باور کرانے کے لیے سیاہ پٹیاں پہن لینی چاہیے’۔وفاقی وزیراطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے پاکستان کرکٹ بورڈ پر زور دیتے ہوئے اپنے بیان میں کہاتھاکہ ‘میں پی سی بی پر زور دیتا ہوں کہ وہ باقاعدہ احتجاج کرے’۔

متعلقہ خبریں