عمران خان کےدور حکومت میں بچوں پر تشدد اور جنسی زیادتی ۔۔۔۔ ہرگز نہیں ہو گی ، حکومت نے شاندار فیصلہ کر لیا

2019 ,فروری 12



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان سچ میں تبدیلی کی طرف جارہا ہے۔ پاکستان میں جنسی زیادتی کرنے والوں کیلیے سخت ایکشن لے لیا ہے۔ وفاقی وزیر انسانی حقوق شیریں مزاری کا کہنا ہے کہ بچوں پر جنسی تشدد کے حوالے سے کمیشن بنایا جارہا ہے۔ جو بچوں کی کونسلنگ کریگا اگر کسی بچے کو زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا ہے تو ہیلپ لائن 1099 پر کال کر سکتا ہے، نام صیغہ راز میں رکھا جائیگا ۔ بچوں پر جنسی تشدد کی روک تھام کے حوالے سے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری کا کہنا ہے کہ بچوں میں جنسی تشدد روز بروز بڑھنے لگا ہے۔ انہوں نے کہاکہ بچوں کو اس حوالے سے آگاہی دینا بہت اہم ہے۔ شیریں مزاری نے کہاکہ ایسے واقعات پر بچوں کو شرمانے کے بجائے بولنا ہو گا۔ انہوں نے کہاکہ سکول اور اساتذہ کا کردار بہت اہم ہے۔شیریں مزاری نے کہا کہ بچوں کو آگاہی دینا ہو گی کہ ہماری سوسائٹی میں کیا ہو رہا ہے؟ انہوں کا کہنا ہے کہ اگر کسی بچے کو زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا ہے تو وہ ہیلپ لائن 1099 پر کال کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہیلپ لائن بچوں اور والدین کا نام صیغہ راز میں رکھے گی۔زیرین مزاری نے کہا کہ ہمارے ملک میں قانون موجود ہے لیکن لوگوں کو آگاہی نہیں جسکی وجہ سے جرائم بڑھ رہے ہیں۔شریں مزاری نے کہا کہ ایک کمیشن بنایا جا رہا ہے جو بچوں کی کونسلنگ بھی کریگا۔

متعلقہ خبریں