وہی ہوا جس کا ڈر تھا ۔۔۔ جموں کشمیر میں بھارتی فوج پر حملہ، بھارت نے جنگی جنون کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایسا اعلان کر دیا کہ پورے خطے میں ہلچل مچ گئی

2019 ,فروری 14



نئی دہلی ( مانیٹرنگ ڈیسک ) بھارت نے پلوامہ میں ہونے والے بھارتی فوج پر حملے کی ذمہ داری پاکستان پر ڈال دی ، بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ کا کہنا تھا کہ پاکستان کی حمایت یافتہ تنظیم کی جانب سے حملہ کیا گیا ہے عوام ہم پر یقین رکھیں کہ اس حملے کا بھرپور جواب دیا جائے گا. مقامی پولیس نے بتایا ہے کہ واقعہ سرینگر سے تقریباً 20 کلومیٹر کے فاصلے پر ضلع پلوامہ کے قصبے اوانتی پورہ میں ایک شاہراہ پر اس وقت پیش آیا جب سی آر پی ایف کا جموں سے سرینگر آنے والا ایک قافلہ گزرہا تھا ، کہ اس دوران مجاہدین کی طرف سے گھات لگا کر قافلے کو خودکش حملے کا نشانہ بنایا اور تقریباً 350 کلوگرام دھماکہ خیزمودا سے لدی کار کو قافلے میں شامل سی آر پی ایف کی 54 بٹالین کی 50 سیٹر بس سے ٹکرا دیا ، دھما کے نتیجے میں ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 42 ہوگئی ہے جبکہ درجنوں اہلکار زخمی بھی ہوگئے ہیں ، انہیں فوری طور پر اسپتال منتقل کردیا گیا ، بھارتی حکام کے مطابق متعدد اہلکاروں کی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے اور ہلاکتوں میں مزید اضافے کا امکان ہے ، قافلے میں 70 گاڑیاں جبکہ 2500 اہلکار شامل تھے ، ابتدائی اطلاعات کے مطابق حملے کے فوری بعد فائرنگ اور گرینیڈ دھماکوں کی آوازیں بھی سنائی دی گئی ہیں ۔ جائے وقوعہ جاری تصاویر کے مطابق حملے کے بعد انسانی اعضاء ادھر ادھر بکھر ے دیکھے گئے ہیں ،کم از کم ایک گاڑی کے حصے شا ہراہ پر بکھر ے پڑے ہیں۔ جبکہ نیلے رنگ کی فوجی بسوں کے حصے بھی شامل ہیں ، دھماکے کے بعد ضلع پلوامہ میں کرفیو نافذ کردیا گیا ہے اور سرچ آپریشن جاری ہیفورسز نے اردگرد کے علاقے کو حصار میں لے کر سیکورٹی سخت کردی ہے ، دوسری جانب بھارت نے اس واقعے کا سیاسی فائدہ اٹھانا شروع کر دیا ہے۔بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ نے واقعے کی ذمہ داری پاکستان پر ڈالتے ہوئے کہا کہ حملہ پاکستان کی حمایت یافتہ تنظیم کی جانب سے کیا گیا ہے ، اس موقع پر بھارتی وزیر نے ہرزہ سرائی کرتے ہوئے کہا کہ عوام ہم پر یقین رکھیں کہ اس حملے کا بھرپور جواب دیا جا ئے گا۔

متعلقہ خبریں