ٹیکنیاں بھروالو ۔۔۔۔ 2 نہیں3 نہیں 5 بھی نہیں ، یکم جون سے پیٹرول کی قیمت میں کتنا اضافہ کیا جانے والا ہے؟ عوام کی چیخیں نکلوا دینے والی خبر

2019 ,مئی 21



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) یکم جون سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 7روپے فی لیٹر اضافے کا امکان ہے۔ انڈسٹری ذرائع کے مطابق روپے کی قیمت میں مسلسل کمی کے باعث یکم جون سے پٹرول مزید مہنگا ہوگا۔ انڈسٹری ذرائع کے مطابق روپے کی قدر کم ہونے سے تیل کی درآمد مہنگی ہو رہی ہےاور رواں مہینے روپے کی قدر میں کمی کا اثر اگلے ماہ سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمت پر دیکھا جا سکتا ہے۔ ذرائع کے مطابق یکم جون سے پیٹرول کی قیمت میں 2، مٹی کے تیل کی قیمت میں 3 جبکہ ڈیزل کی قیمت میں 7روپے فی لیٹر تک اضافہ ہو سکتا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ قیمت میں ردوبدل کا حتمی فیصلہ 26 مئی تک درآمدی تیل قیمت کی روشنی میں ہوگا۔ دوسری جانب حکومت نے رمضان سے قبل پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کرتے ہوئے فی لیٹر پیٹرول 9 روپے 42 پیسے مہنگا کردیا۔ آج سے پیٹرول کی قیمت میں 9 روپے 42 پیسے اضافہ کیا گیا ہے جس کے بعد پیٹرول کی نئی قیمت 108 روپے 31 پیسے ہوگئی جب کہ مٹی کا تیل 7 روپے 46 پیسے اضافے کے بعد 96 روپے 77 پیسے فی لیٹر ہوگیا۔ ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 4 روپے 89 پیسے فی لیٹر بڑھا دی گئی جس کے بعد ڈیزل کی نئی قیمت 122 روپے 32 پیسے فی لیٹر مقرر ہوگئی جبکہ لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت 86 روپے94 پیسے فی لیٹر مقرر کی گئی ہے۔ پہلی بار قیمتوں میں اضافے کی اطلاع براہ راست آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کو دی گئی ہے اس کے ساتھ ہی ایف بی آر نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں پر لاگو ٹیکس میں اضافے کی نئی شرح بھی جاری کردی ہے۔ پیٹرول پر جی ایس ٹی 2 فیصد سے بڑھا کر 12 فیصد کردیا، ہائی اسپیڈ اور لائٹ ڈیزل پر ٹیکس کی یکساں شرح بڑھا کر 17 فیصد کی گئی ہے جب کہ مٹی کے تیل پر جی ایس ٹی 8 فیصد سے بڑھا 17 فیصد کردیا گیا ہے۔ دوسری جانب وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کہتی ہیں کہ پیٹرول بم جان بوجھ کر نہیں گرایا، عالمی سطح پر تیل کی قیمت میں اضافہ ہوا ہے، قیمتوں میں اضافے کا بوجھ حکومت اور عوام کو مل کر برداشت کرنا پڑے گا۔ مہنگائی کی آگ پر تیل چھڑکنے کی تیاری، یکم اپریل سے پیٹرولیم مصنوعات مزید مہنگی ہونے کا امکان ہے۔اوگرا نے پیٹرولیم مصنوعات تین سے پانچ روپے فی لیٹر تک مہنگی کرنے کی تیاری کرلی ہے، اوگرا پیٹرول اور دیگر منصوعات میں اضافے کی سمری رواں ماہ کے آخر میں پٹرولیم ڈویژن کو ارسال کرے گا۔ادھر عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت بھی تین ماہ کی بلند ترین سطح پرآ گئی، خام تیل کی عالمی قیمت سڑسٹھ ڈالر اکسٹھ سینٹ فی بیرل ہوگئی۔عالمی منڈی میں قیمتوں میں اضافے کے باعث پاکستان میں بھی پیٹرولیم مصنوعات مزید مہنگی ہونےکا خدشہ ہے۔

متعلقہ خبریں