نوازشریف کو اگر کچھ ہوا تو۔۔۔۔۔۔ مریم نواز نے حکومت کو آڑھے ہاتھوں میں لے لیا

2019 ,مارچ 8



لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک ) سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کوجیل میں ذہنی اذیت میں مبتلا کیا جارہا ہے ،جس سے ان کی حالت مزید خراب ہوتی جارہی ہے، نوازشریف کی صحت ٹھیک نہیں ہےاورحکومت انہیں صحت کی مناسب سہولیات فراہم نہیں کررہی اگرخدانخواستہ نوازشریف کو جیل میں کچھ ہوگیا توذمہ دارکون ہوگا. پاکستان کے سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ نوازکے سابق چئیرمین میاں نواز شریف جوکہ کرپشن کیس میں لاہور کی کوٹ لکھپت جیل میں سزا کاٹ رہے ہیں کی صحت خراب ہے ، لیکن نوازشریف علاج نہ کروانے پربضدہیں ، نوازشریف کا کہنا ہے کہ وہ علاج کے نام پر باربار مختلف ہسپتالوں میں جا کر ذلیل نہیں ہونا چاہتے ، نوازشریف دل کےعارضےمیں مبتلا ہیں اور ڈاکٹرز نے انہیں انجیوگرافی کروانے کا مشورہ دیا ہے ، لیکن نوازشریف انجیوگرافی کروانے سے مسلسل انکار کرتے چلے آرہے ہیں ، نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز نے بھی اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ میاں نوازشریف کی صحت مزید خراب ہوتی جارہی ہے ، اور انہیں صحت کی سہولیات مہیا نہیں کی جارہیں ، نبیل گبول نے بھی کہا کہ نواز شریف کی صحت کا معاملہ سنجیدہ ہے ، لیکن حکومت اسےغیرسنجیدگی سے لے رہی ہے ، بلکہ میاں نواز شریف کو جیل میں ذہنی اذیت دی جارہی ہے ، ان کا کہنا تھا ، کہ حکومت کو چاہیے کہ میاں صاحب کی صحت کے معاملے کو حل کیا جائے ، انہوں نے سوال اٹھایا کہ اگر میاں صاحب کو خدانخواستہ کچھ ہوگیا تو ذمہ دارکون ہوگا ، ن لیگ کے ایکاور رہنما طلال چوہدری نے بھی میاں نوازشریف صاحب کی صحت کے بارے بات کرتے ہوئے اسی بات کا اظہار کیا کہ میاں نوازشریف جیل میں ذہنی دباو ٴکا شکار ہیں میاں نوازشریف کی صحت مزید خراب ہوتی جارہی ہے جس کی وجہ سےان کی صحت پرمنفی اثرات پڑرہے ہیں ، اوران کی صحت بگڑنےکا اندیشہ ہے۔

متعلقہ خبریں