لاہوریو مال روڈ پر جانے سے قبل یہ خبر لازمی پڑھ لو ۔۔۔ پھر نہ کہنا بھاری جرمانہ ہوگیا

2019 ,اپریل 28



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) کراچی کی شارع فیصل کے بعد لاہور کی مال روڈ پر بھی موٹرسائیکل سواروں کیلئے الگ لائن مختص کردی گئی‘لاہورمیں ٹریفک کی روانی بہتربنانے اور حادثات کی روک تھام کے لیے موٹرسائیکلوں اور بسوں کے لیے الگ لین بنانے کے منصوبے پرعمل درآمدشروع کردیاگیا. انتظامیہ کا کہنا ہے کہ موٹرسائیکل سواروں کیلئے الگ لائن مختص کرنے کا مقصد حادثات کی روک تھام ہے‘پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کے مطابق ابتدائی مرحلے میں مال روڈ کا انتخاب کیاگیاہے، جس کے بعد کینال روڈ اور پھر شہر بھر میں اس منصوبے پر عمل درآمد شروع کر دیا جائے گا ،موٹر سائیکلیں اور بسیں اب ان گرین لائنز کے اندر ہی چلائی جا سکیں گی،ورنہ بھاری جرمانے کا سامنا کرنا پڑے گا. شہریوں کی رہ نمائی کے لیے گرین لین پر بسوں اور موٹرسائیکلوں کی تصاویریں بھی بنائی گئی ہیں جبکہ سڑک کنارے معلوماتی بورڈ ز بھی آویزاں کئے گئے ہیں‘گرین لین میں موٹرسائیکلوں اور بسوں کے لیے حدرفتار50 کلومیٹر فی گھنٹامقررکی گئی ہے. شہریوں نے گرین لائن سسٹم کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے حادثات میں کمی واقع ہوگی. شہریوں کی رہ نمائی کے لیے گرین لین پر بسوں اور موٹرسائیکلوں کی تصاویریں بھی بنائی گئی ہیں جبکہ سڑک کنارے معلوماتی بورڈ ز بھی آویزاں کئے گئے ہیں‘گرین لین میں موٹرسائیکلوں اور بسوں کے لیے حدرفتار50 کلومیٹر فی گھنٹامقررکی گئی ہے. شہریوں نے گرین لائن سسٹم کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے حادثات میں کمی واقع ہوگی. لاہورمیں ٹریفک کی روانی بہتربنانے اور حادثات کی روک تھام کے لیے موٹرسائیکلوں اور بسوں کے لیے الگ لین بنانے کے منصوبے پرعمل درآمدشروع کردیاگیا. انتظامیہ کا کہنا ہے کہ موٹرسائیکل سواروں کیلئے الگ لائن مختص کرنے کا مقصد حادثات کی روک تھام ہے‘پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کے مطابق ابتدائی مرحلے میں مال روڈ کا انتخاب کیاگیاہے، جس کے بعد کینال روڈ اور پھر شہر بھر میں اس منصوبے پر عمل درآمد شروع کر دیا جائے گا ،موٹر سائیکلیں اور بسیں اب ان گرین لائنز کے اندر ہی چلائی جا سکیں گی،ورنہ بھاری جرمانے کا سامنا کرنا پڑے گا. شہریوں کی رہ نمائی کے لیے گرین لین پر بسوں اور موٹرسائیکلوں کی تصاویریں بھی بنائی گئی ہیں جبکہ سڑک کنارے معلوماتی بورڈ ز بھی آویزاں کئے گئے ہیں‘گرین لین میں موٹرسائیکلوں اور بسوں کے لیے حدرفتار50 کلومیٹر فی گھنٹامقررکی گئی ہے.

متعلقہ خبریں