جسینڈا آرڈرن ‘ نے نیوزی لینڈ کے سُپر سٹور میں ایک خاتون کو شاپنگ کیوں کروائی؟ پوچھنے پر ایسا جواب دے ڈالا کہ پوری دنیا کی آنکھیں نم ہوگئیں

2019 ,اپریل 6



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)گزشتہ ماہ 15 مارچ کو نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں مساجد پر ہونے والے دہشت گرد حملے میں 50 نمازیوں کی شہادت کے بعد مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کرنے والی جیسنڈا آرڈرن کی شہرت میں دن بہ دن اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔پہلے انہیں مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کے دوران حجاب اوڑھنے کی وجہ سے دنیا بھر میں شہرت حاصل ہوئی اب ان کی جانب سے ایک خاتون کا بل ادا کرنے پر ان کی تعریفیں کی جا رہی ہیں۔جیسنڈا آرڈرن نے گزشتہ ہفتے نیوزی لینڈ کے ایک شاپنگ مال میں ایک خاتون خریدار کے سامان کا بل ادا کیا تھاجس کے بعد سوشل میڈیا پر ان کی تعریفیں ہونے لگیں۔خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ کے مطابق گزشتہ جیسنڈا آرڈرن شاپنگ کے لیے ایک سپر مارکیٹ پہنچیں، جہاں انہوں نے ایک خاتون کی جانب سے کی گئی تمام خریداری کا بل ادا کیا۔رپورٹ کے مطابق نیوزی لینڈ کی وزیراعظم نے اس وقت خاتون کا بل ادا کیا جب خاتون بل کی ادائیگی کے لیے کاؤنٹر پر پہنچیں تو انہیں احساس ہوا کہ وہ اپنا پرس گھر بھول آئی ہیں۔خریداری کرنے والی خاتون کے ساتھ ان کے 2 بچے بھی تھے اور انہوں نے پوری خریداری کرکے سامان پیک کروالیا تھا۔رپورٹ کے مطابق گھر پر پرس بھول آنے والی خاتون کے پیچھے جیسنڈا آرڈرن تھیں اور انہوں نے خریدار خاتون کا بل ادا کرکے ان کی مدد کی۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ واقعے کے اگلے روز بعد خاتون نے مدد کرنے پر جیسندا آرڈرن کی تعریف میں فیس بک پر ایک پوسٹ لکھی جو دیکھتے ہی دیکھتے وائرل ہوگئی اور سب نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم کی تعریفیں کرنے لگے۔خریدار خاتون کی مدد کرنے پر جب صحافیوں نے جیسنڈا آرڈرن سے پوچھا کہ انہوں نے ایک انجان خاتون کی مدد کیوں کی تو انہوں نے جواب دیا کہ ’چوں کہ وہ ایک ماں تھیں‘۔جیسنڈا آرڈرن نے صحافیوں سے گفتگو کے دوران اس بات کی تصدیق کی کہ انہوں نے خریدار خاتون کی مدد کی، کیوں کہ وہ اپنا پرس گھر پر بھول آئی تھیں اور ان کے ساتھ اپنے بچے بھی تھے۔مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق نیوزی لینڈ کی وزیراعظم کی ماہانہ تنخواہ 47 ہزار ڈالر سے زائد ہے جو پاکستانی ساڑھے 4 کروڑ روپے سے زائد بنتی ہے۔خیال رہے کہ 38 سالہ جیسنڈا آرڈرن خود بھی ایک بچے کی ماں ہیں، انہوں نے گزشتہ برس 21 جون کو بیٹی کو جنم دیا تھا۔جیسنڈا آرڈرن دنیا کی وہ دوسری خاتون وزیر اعظم ہیں جنہوں نے وزارت عظمیٰ پر رہتے ہوئے بچے کو جنم دیا۔ان سے قبل پاکستان کی پہلی خاتون وزیر اعظم بے نظیر بھٹو نے 1990 میں بڑی صاحبزادی بختاور بھٹو زرداری کو جنم دیا تھا۔جیسنڈا آرڈرن نے اگرچہ تاحال شادی نہیں کی، تاہم وہ اپنے ہمسفر کلارک گفورڈ کے ساتھ وزیر اعظم ہاؤس میں رہتی ہیں اور جلد ہی شادی کا ارادہ بھی رکھتی ہیں۔جیسنڈا آرڈرن کی بیٹی 21 جون کو پیدا ہوئی تھی اور یہ دن بے نظیر بھٹو کی پیدائش کا دن بھی ہے۔جیسنڈا آرڈرن کی جانب سے 21 جون کو بیٹی کو جنم دینے پر کئی لوگوں نے ان سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ بیٹی کا نام ’بے نظیر‘ رکھیں، تاہم انہوں نے بیٹی کا نام ’نیو‘ رکھا

متعلقہ خبریں