رمضان کی آمد آمد :وزیر اعلیٰ عثمان بزدار نے پنجاب کی جیلوں میں موجود قیدیوں کو شاندار سرپرائز دے دیا

2019 ,مئی 5



لاہور(مانیٹرنگ ڈسک) پنجاب بھر کی جیلوں میں قید مجرموں کی سزا میں 60 دن کمی کا اعلان کردیا گیا ہے۔محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے قیدیوں کی سزا میں تخفیف کا اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے، جس کے تحت صوبے بھر کی جیلوں میں قید مجرموں کی سزا میں 60 روز کی کمی کی گئی ہے تاہم اس کا اطلاق دہشت گردی، قتل اور اغوا سمیت دیگر سنگین مقدمات کے مجرموں کی سزا پر نہیں ہوگا۔محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے جاری کردہ نوٹی فکیشن کی نقول آئی جی جیل خانہ جات سمیت تمام جیل سپرٹنڈنٹس کو بھجوائی گئی ہے۔دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے قیدیوں کی سزاؤں میں دو ماہ کی کمی کا اعلان کر دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے سنٹرل جیل کوٹ لکھپت کا دورہ کیا۔ اس موقع پر انہوں نے قیدیوں کے ڈیٹا کو آن لائن کرنے کے سسٹم کا افتتاح بھی کیا۔ذرائع کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب نے سنٹرل جیل کوٹ لکھپت کے دورہ کے دوران قیدیوں کی سزا میں دو ماہ کی کمی کا اعلان بھی کیا۔ قیدیوں کے ڈیٹا سسٹم کے تحت قیدیوں کے بارے میں تمام معلومات آن لائن ہوں گی۔نجی ٹی وی نیوز چینل کے مطابق قیدیوں کے آن لائن ڈیٹا سسٹم کو دیگر جیلوں میں بھی متعارف کرایا جائے گا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے جیل کے کچن کا بھی معائنہ کیا اور قیدیوں کیلئے تیار کی جانے والی روٹی اور سالن خود کھا کر معیار چیک کیا ۔ صوبائی وزراء نے بھی قیدیوں کے لئے پکایا جانے والا سالن کھایا۔دوسری جانب وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے قیدیوں کی سزا میں دو ماہ کی کمی کا اعلان کیا ہے۔ عثمان بزدار نے سنٹرل جیل کوٹ لکھپت میں ٹیکنیکل ٹریننگ سنٹر،خواتین قیدیوں کے لئے مخصوص ڈائننگ ہال ، قیدیوں کے ڈیٹا کو آن لائن کرنے کے سسٹم اور اینٹی گریٹڈسکیورٹی سسٹم کا افتتاح کیا۔جس کے تحت قیدیوں کے بارے میں تمام معلومات آن لائن ہوں گی۔عثمان بزدار نے کہاکہ قیدیوں کے آن لائن ڈیٹا سسٹم کو دیگر جیلوں میں بھی متعار ف کرایاجائے گا۔صوبے بھر کی جیلوں میں ہائی سکیورٹی پریزن سسٹم نافذ کیا جا رہاہے۔وزیراعلیٰ نے شجرکاری مہم کے تحت جیل میں پودا بھی لگایا۔

متعلقہ خبریں