سیاسی منظر نامے میں ڈاکٹر طاہر القادری کی اچانک دبنگ انٹری ایسا اعلان کر دیا کہ عمران خان بھی حیران رہ گئے

2019 ,اپریل 20



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک ) پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ تا حال سانحہ ماڈل ٹاون کے کسی قاتل کو سزا نہیں ملی۔ان کا کہنا ہے کہ قاتل آزاد ہیں، سانحہ ماڈل ٹاون میں ملوث افسروں کو محکمانہ انکوائری کی تکلیف سے بھی بچایا گیا، ظلم کے خلاف احتجاج کرنے والوں کو نظام نے قیدی بنا دیا ہے۔لاہور میں مرکزی رہنماوں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے کسی قاتل کو سزا نہیں ملی، ہم فیصلہ چیلنج کریں گے۔طاہر القادری کا کہنا تھا کہ فیصلہ چیلنج کر کے کارکنوں کو انصاف دلوائیں گے، شہدا کے ورثا کو 5 سال سے غیر جانب دار تفتیش کا حق نہیں ملا، تا حال کسی قاتل کو سزا نہیں ملی۔ انھوں نے کہا سرکار کچھ بھی نہیں کر رہی ، یاد رہے کہ اس سے قبل یہ بھی خبر تھی کہ سرگودھا کی انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت نےبھیرہ انٹرچینج پر پولیس سے تصادم میں ملوث عوامی تحریک کے سربراہ طاہرالقادری اوران کے کارکنوں کیخلاف کیس کا فیصلہ سنادیا۔عدالت نے ڈاکٹر طاہر القادری سمیت 10 افراد کو اشتہاری قرار دیتے ہوئے انہیں فوری گرفتارکرنے کا حکم دیدیا جبکہ اس مقدمے میں 107 کارکنوں کو سات سات سال قید با مشقت کا حکم سنادیا گیا۔عوامی تحریک کے کارکنوں کے ساتھ جھڑپوں کے دوران دو پولیس اہلکار شہید اوردرجن سے زائد زخمی ہوئے تھے۔ اور اب یہ خبر سامنے آئی ہے۔ کہ پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ تا حال سانحہ ماڈل ٹاون کے کسی قاتل کو سزا نہیں ملی۔ان کا کہنا ہے کہ قاتل آزاد ہیں، سانحہ ماڈل ٹاون میں ملوث افسروں کو محکمانہ انکوائری کی تکلیف سے بھی بچایا گیا، ظلم کے خلاف احتجاج کرنے والوں کو نظام نے قیدی بنا دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے کسی قاتل کو سزا نہیں ملی، ہم فیصلہ چیلنج کریں گے۔

متعلقہ خبریں