قوم کی بیٹی کب پاکستان آنے والی ہے ؟ دھماکہ خیز انکشافات نے عالمی دنیا میں تھرتھلی مچا دی

2019 ,جولائی 25



پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) جمعیت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ خان صاحب!کل آپ کے لوگ این آراومانگنے آئے تھے، چیئرمین سینیٹ اور وزیراعظم کو این آر اونہیں ملے گا، عافیہ صدیقی پاکستان آئے گی، آکربس اتنا کہے گی مجھے افغانستان سے نہیں کراچی سے گرفتار کیا گیا، یہ الفاظ تباہی ہوں گے۔انہوں نے پشاور میں یوم سیاہ کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عافیہ صدیقی پاکستان آئے گی، آکربس یہ کہے گی مجھے افغانستان سے نہیں کراچی سے گرفتار کیا گیا، یہ الفاظ تباہی ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ یہ وزیراعظم ہے جس کوسفارتی چیزوں کا پتا نہیں ہے،تم نے امریکا میں کہا کہ اسامہ دبن لادن کو پکڑاتوآئی ایس آئی نے رہنمائی کی تھی، لیکن انہوں نے کہا کہ تھا کہ ہم سے اجازت لیکر امریکا نے کاروائی نہیں کی، ہمارے ریڈار توٹیکنالوجی سے بند کردیے گئے تھے، تم نے ایران میں جاکر بھی پاکستان کا مقدمہ ہارا۔تم نے کہا کہ پاکستان سے ایران کیخلاف دہشتگرد گروپ آپریٹ ہوتے رہے۔مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ آج سب کو کہتا ہے چور۔جس کو تم نے پکڑا ہے اس کیخلاف توتم چوری ثابت نہیں کرسکے۔ میڈیا کے ذریعے الفاظ دہرائے جارہے ہیں، لاؤ ان کو عدالت میں چوری ثابت کرو۔وہ ایک ہوں گے یا دو ہوں گے لیکن عمران خان تیرا توسارا ٹبرچور نکلا ہے۔آج معیشت بیٹھ چکی ہے، ملکی ترقی اور خومختاری کا دارومدار ملکی معیشت پر ہوتا ہے۔سویت یونین ہمارے سامنے مثال ہے، جب ان کی معیشت گرگئی تو وہ اپنا دفاع نہیں کرسکا، انہوں نے کہا کہ یہ جعلی وزیراعظم ہے ، امریکا میں کھڑے ہوکر کہتا کہ یہ مجھے سے این آر او مانگتے ہیں۔لیکن خان صاحب! آپ جو ہمیں این ار او کا کہتے رہتے ہیں آپ کو بتاتا چلوں کل آپ کے لوگ مجھ سے این آر اومانگنے آئے تھے،لیکن چیئرمین سینیٹ اور وزیراعظم کو این آر اونہیں ملے گا۔ وزیراعظم نے امریکا میں وہی گالیاں دیں ، جو یہاں دیتے تھے۔

متعلقہ خبریں