دل کے مریض نے کھانسی کے ساتھ شریانوں کا گچھامنہ سے نکال پھینکا

2018 ,دسمبر 9



کلی فورنیا(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا میں آئے روزنئی نئی بیماریاں سامنے آرہی ہیں اور طبی ماہرین بھی ان پر تحقیقات کرنے اور علاج معالجہ دریافت کرنے میں مصروف ہیں لیکن بسا اوقات پہلے سے موجود بیماریوں کے مریضوں کیساتھ ہی کچھ ایسے واقعات رونما ہوجاتے ہیں کہ ماہرین کے لیے بھی یقین کرنا مشکل ہوجاتاہے ، ایسا ہی ایک واقعہ کیلیفورنیا کے ایک ہسپتال میں پیش آیاجہاں دل کے مریض کا علاج جاری تھا اور اس دوران شدید کھانسی کے ساتھ اس نے شریان کا ایک حصہ منہ سے نکال باہر پھینکا۔
نیو انگلینڈ جرنل آف میڈیسن کے مطابق ڈاکٹر جارج ویسل تھیلرکے ہاں زیرعلاج36 سالہ مریض نے کھانسی کے دوران منہ سے شریان کا ایک حصہ اگل دیا۔وہ دائیں پھیپھڑوں کی ایک شاخ کی کی طرح دکھائی دیتی ہے۔ طبی سائنس میں اپنی نوعیت کا یہ پہلا اور انوکھا واقعہ ہے۔ہسپتال ذرائع کے حوالے سے بتایاکہ زیرعلاج مریض کا دل درست طریقے سے خون کو جسم کے دیگر حصوں تک پمپ نہیں کر پا رہا تھا جس کے باعث دل کے ساتھ ایک پمپنگ کیلئے ایک آلہ نصب کیا گیا تھا لیکن اس کی وجہ سے شریانوں میں کلوٹنگ کا خطرہ بڑھ جاتا ہے اور اس خطرے سے بچنے کے لیے مریض کو خون جمنے سے روکنے والی دو کے انجیکشن لگائے جا رہے تھے جو کہ معمول کا طریقہ علاج ہے۔ماہرین کاکہناتھاکہ یہ تو ایک واقعہ تھا لیکن اس کی اصل وجہ کیابنی اور کس حدتک یہ خطرہ ہوسکتاہے ، اس بارے میں کوئی بھی رائے قائم کرنا قبل ازوقت ہوگا، فارنزک رپورٹ کے بعد ہی کچھ کہاجاسکتاہے۔

متعلقہ خبریں