مئیر کراچی وسیم اختر تو بڑے دل والے نکلے ۔۔۔۔اپنی قیمتی ترین شے عطیہ کرنے کا اعلان کر دیا

2019 ,مئی 5



کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) میئر کراچی وسیم اختر نے اپنی آنکھیں عطیہ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے دوسروں کو بھی آنکھیں عطیہ کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ مئیر کراچی وسیم اختر نے آئی بینک سوسائٹی ہسپتال میں آنکھوں کی لیبارٹری کی افتتاحی تقریب میں شرکت کی ، میئر نے تقریب میں شرکت پر خوشی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو میں مئیر کراچی نے بھی اپنی آنکھیں عطیہ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ معاشرے کے دیگر افراد بھی آنکھیں عطیہ کرنے کے عمل میں شامل ہوں یہ ایک اہم سماجی معاشرتی اور دینی ذمہ داری ہے۔میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ پاکستان آئی بینک سوسائٹی ہسپتال کے ایم سی کے ساتھ اشتراک کر رہی ہے جو کہ خوش آئند ہے ماضی کے تمام مئیر اس ہسپتال کا دورہ کرچکے ہیں اور آج مجھے اس ہسپتال کا دورہ کر کے بہت خوشی ہورہی ہے۔تقریب میں مئیر کراچی وسیم اختر علاوہ صدر پی ای بی ایس قاضی ساجد علی، نائب صدر پی ای بی ایس ڈاکٹر اختر جمال خان اور دیگر نے بھی شرکت کی۔دوسری جانب لٹیروں کو کوئی لگام نہ ڈال سکا، دیدہ دلیری اتنی ہوگئی کہ کہ میئر کراچی وسیم اختر کی سرکاری گاڑی بھی چھین لی گئی۔ ایس ایچ او درخشاں ثناء اللہ کو علاقے سے 3 سرکاری گاڑیاں چھینے جانے پر عہدے سے معطل اور تنزلی کردی گئی۔ شہر قائد میں اسٹریٹ کرائم، موبائل اور گاڑیاں چھیننے کے واقعات میں اضافہ ہوگیا، تقریباً ہر علاقے سے جرائم کی خبریں آرہی ہیں، لٹیرے اس قدر دیدہ دلیری ہوگئے کہ عام شہریوں کے بعد کراچی کے میئر وسیم اختر کی سرکاری گاڑی بھی چھین لی۔ ڈیفنس میں کار سوار اسلحہ بردار 3 افراد نے میئر کراچی کے ڈرائیور سَنی کو اسلحہ دکھایا اور جی ایس ڈی 999 نمبر پلیٹ کی سرکاری گاڑی لے اڑے، ایس ایچ او درخشاں ثناء اللہ کی تعیناتی کے بعد سے علاقے میں سرکاری گاڑی چھینے جانے کا یہ تیسرا واقعہ تھا۔ پہ در پہ واقعات کے بعد محکمہ پولیس میں ہلچل مچ گئی، ایس ایچ او درخشاں ثناء اللہ کو نا صرف عہدے سے معطل بلکہ ان کی تنزلی بھی کردی گئی۔

متعلقہ خبریں