رانا ثناء اللہ کو کچھ ہوا تو مقدمہ کس کے خلاف درج کروائیں گے؟ لیگی رہنماء کی اہلیہ نے حیران کُن اعلان کر دیا

2019 ,جولائی 3



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) رانا ثناءاللہ کی اہلیہ نبیلہ ثناءنے کہاہے کہ رانا ثنا ءاللہ کو کچھ ہوا تو میں عمران خان کیخلاف ایف آئی آر درج کراﺅں گی ۔ جیونیوز کے پروگرام ”آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے نبیلہ ثناءنے کہا کہ حکومت خدا کاخوف کرے مجھے آج پتہ چلاہے کہ رانا ثنا ءاللہ پرحملہ کرنا ہے ، اگر یہ ہوگیا تو جورات قبر کی ہے وہ قبر میں آنی ہے لیکن اگر رانا ثنا ءاللہ کوکچھ ہوا تو میں اس کی ایف آئی آر عمران خان کے خلاف کرواﺅں گی ، میں ڈرنے والی نہیں ہوں ، یہ رانا ثنا ءاللہ ہی بیٹھا ہوا ہے ، میں آج منتیں کرتی رہی ہوں لیکن مجھے رانا ثنا ءاللہ کو پانی بھی نہیں دینے دیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ میں نے کہا تھاکہ پولیس والوں نے میرے ڈیرے پر حملہ کیا اور کیمرے توڑ دیئے اور کمپیوٹر بھی اٹھا کرلے گئے ۔ان کا کہنا تھا کہ مجھے ایک فون آیا تھا جس میں مجھے کہا گیا کہ ہم تم کومنع کرتے ہیں لیکن تم باز نہیں آتی میڈیا میں جاتی ہوجس پر میں نے بھی ان کو ایسے ہی جواب دیا اور پھر فوج بند کردیاگیا ۔اس سے قبل نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے نبیلہ ثنااللہ نے کہا کہ ملاقات کے دوران ایک اے ایس آئی نے کہا کہ باجی آپ اپنے ملازموں کو چیک کریں جنہوں نے بیگ رانا صاحب کی گاڑی میں رکھا ہے ، میں نے پوچھا کہ کونسا بیگ رکھاہے ؟ وہ مجھے کہنے لگے کہ بیگ میں سے 15کلوہیروئن نکلی ہے ، میں نے کہا کہ ریما نکلی ہے یا میرا؟ ، ہمارے ذہن میں تو ہیروئن یہی ہے ، رانا صاحب نے مجھے منع کیا کہ اس طرح بات نہ کرو ۔ اہلکار نے ہم نے رانا صاحب کو روکا اورلے کر یہاں آ گئے ہیں ۔ نبیلہ ثنااللہ کا کہناتھا کہ رانا صاحب نے مجھے کہا کہ یہ جھوٹ بول رہے ہیں ، میری گاڑی کے آگے آ کر انہوں نے گاڑیاں لگائیں اور ڈرائیور کو باہر نکالا ۔نبیلہ ثنااللہ اے ایس آئی نے مجھے خود بتایا کہ آپ فکر نہ کریں ہمیں بھی ڈیڑھ بجے کال آئی ہے ، ہمیں بھی کچھ سمجھ نہیں لگی تھی کہ کس بندے کے ساتھ کیا کرنا ہے ۔ نبیلہ ثنااللہ کا کہناتھا کہ رانا صاحب نے کہا کہ مجھے پتا ہے کہ بیگ میری گاڑی میں کس نے رکھاہے ، اگر تو یہ بیگ میری گاڑی سے نکلا تھا تو آپ مجھے یہ موٹر وے پر ہی دکھاتے اور کہتے کہ یہ آپ کی گاڑی سے نکلا ہے لیکن جب دفتر پہنچ گئے ہیں تو آپ دکھا رہے ہیں کہ بیگ میری گاڑی سے نکلا ہے ۔ ان کا کہناتھا کہ نامعلوم کال آئی تھی کہ ہم آپ سب کو سمجھا رہے ہیں کہ کچھ نہیں بولنا ، میں نے گالیاں دیں تو فون بند ہو گیا ۔نبیلہ ثنااللہ کا کہناتھا کہ ملاقات میں لگا کہ انہیں فیملی کی وجہ سے ڈرایا اور دھمکایا جارہاہے ، راناصاحب نے کہا کہ سب کو بتا دو کہ میں حوصلے میں ہوں ، ان کی زبان نہیں بولوں گا ، رانا صاحب کچھ روز سے کہہ رہے تھے کہ فیملی کا کوئی فرد اکیلے باہر نہ نکلے ۔

متعلقہ خبریں