’’ نیب کے عقوبت خانوں میں قیدیوں کی بیویوں اور۔۔۔۔‘‘ حمزہ شہباز نے انتہائی دردناک انکشاف کر دیا

2019 ,اپریل 13



لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک)مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما حمزہ شہباز نے انکشاف کیاہے کہ نیب کے عقوبت خانوں میں درجنوں لوگ بند ہیں جن کے بیوی اور بچوں کو ان کی چیخیں سنوائی جاتی ہیں ، وہ روز جیتے اور روز مرتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق لاہور میں پریس کارنفرنس کرتے ہوئے حمزہ شہبازنے کہا کہ نیب والے شہباز شریف کوگرفتار کرنے آتے اور بھاشن دیتے ہیں ، حمزہ شہباز کوگرفتار کرنے آتے ہیں تو بھاشن دیتے ہیں، انہوں نے کہا کہ میں آج ایک پاکستانی شہری کی حیثیت سے چیف جسٹس پاکستان اور چاروں صوبوں کی ہائی کورٹس کے چیف جسٹس صاحبان سے درخواست کرتاہوں کہ مجھے بلائیں میں ہتک عزت کا دعویٰ کروں گا ۔انہوں نے انکشاف کیا کہ نیب کے عقوبت خانوں میں درجنوں لوگ بند ہیں جن کے بیوی اور بچوں کو ان کی چیخیں سنوائی جاتی ہیں ، وہ روز جیتے اور روز مرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ مجھے وہ دن نہیں بھولتا جب میرا باپ بیمار تھا اور کینسر کی بیماری سے جنگ لڑ رہا تھا لیکن مجھے بار بار نیب میں بلایا جاتا تھا اور مجھے پاکستان سے جانے کی اجازت نہیں دی تھی کہ میں اپنے باپ کی عیادت کرسکوں ۔ خیال رہے کہ نیب ٹیم اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہبازشریف کی بیٹی کے گھر پہنچ گئی، نیب لاہور نے شہبازشریف کی بیٹی کو سمن بھی جاری کیا تھا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق نیب کی تحقیقاتی ٹیم اپوزیشن لیڈر حمزہ شہبازکو گرفتار نہ کرنے کے بعد اب شہبازشریف کی بیٹی کے گھر پہنچ گئی ہے۔ دوسری جانب ترجمان ن لیگ مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ نیب ٹیم بغیر کسی نوٹس اور وارنٹ شہبازشریف کی بیٹی کے گھر پہنچی ہے۔پولیس کی بھاری نفری نے بھی بغیر کسی نوٹس شہبازشریف کی بیٹی کے گھر کا گھیراؤ کرلیا ہے۔ ڈی ایس پی ماڈل ٹاؤن کی سربراہی میں تین تھانوں کی پولیس کی بھاری نفری تعینات کردی گئی ہے۔ ترجمان نیب نے اپنے مئوقف میں بتایا ہے کہ ںیب ٹیم نے شہبازشریف کی بیٹی کے گھر چھاپہ نہیں مارا، نیب ٹیم پولیس کے ہمراہ شریف ہاؤس میں صرف نوٹس وصول کروانے گئی تھی۔نیب کی جانب سے اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہبازشریف کی بیٹیوں اور اہلیہ نصرت شہباز کو نوٹسز دیے گئے۔ نوٹسز سکیورٹی گارڈز نے وصول کیے ہیں۔واضح رہے اس سے قبل نیب لاہور نے اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف کی اہلیہ، صاحبزادیوں اور بیٹے کو طلب کیا ہے، نیب ذرائع کے مطابق شہباز شریف کی اہلیہ، صاحبزادیوں اور بیٹوں کیخلاف آمدن سے زائد اثاثوں کا الزام ہے۔نیب نے15اپریل کوحمزہ شہباز کو رمضان شوگر مل کے نالے کی تعمیر کے کیس میں طلب کیا تھا۔ اب دوبارہ 16 اپریل کو طلب کیا گیا ہے، دوسری طلبی میں ان سے آمدن سے زائد آثاثے بنانے کے حوالے سے پوچھ گچھ کی جائے گی۔ شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز کو آمدن سے زائد آثاثے بنانے کی تحقیقات کے لیے بلایا گیا ہے جبکہ 18اپریل کو میاں شہباز شریف کی صاحبزادی رابعہ شریف کو طلب کیا گیا ہے اور 17اپریل کو دوسری صاحبزادی جویریہ شریف کو پیش ہونے کا کہا گیا ہے۔ نصرت شہباز کےخلاف 12کمپنیوں میں شیئرز کے حوالے سے تحقیقات کی جائیں گی۔

متعلقہ خبریں