وہی ہوا جس کا ڈر تھا : قریشی، ترین تنازعہ ۔۔۔۔ وزیر اعظم نے شاہ محمود قریشی کو اب تک کا سب سے بڑا حکم جاری کر دیا

2019 ,اپریل 13



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان اور پارٹی کے سینئر رہنماء جہانگیرترین کے درمیان اہم ملاقات ہوئی ہے، جس میں سیاسی صورتحال اور انتظامی امور پر تبادلہ خیا ل کیا گیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان سے پی ٹی آئی کے سینئر رہنماء جہانگیرترین آج اسلام آباد میں ملاقات کی، ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمرا ن خان اور جہانگیرترین کے درمیان ملاقات میں سیاسی صورتحال اور انتظامی امور پر بات چیت ہوئی۔ملاقات میں زراعت ، لائیواسٹاک ، اور نئے بلدیاتی نظام سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعظم عمران خان نے عوام کو ریلیف دینے کے معاملے پر بھی مشاورت کی۔بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم عمرا ن خان اور جہانگیرترین کے درمیان ملاقات میں نئے بلدیاتی نظام اور زرعی شعبہ کی بہتری کیلئے مختلف تجاویز کا جائزہ لیا گیا۔واضح رہے جہانگیرترین تحریک انصاف کے سابق سیکرٹری جنرل ہیں، جہانگیرترین کو کرپشن کیسز میں عدالت نے تاحیات نااہل قراردے رکھا رہے، اس لیے ان پر پابندی عائد ہے کہ وہ کوئی بھی سرکاری عہدہ نہیں رکھ سکتے۔جس کے باعث وزیراعظم عمران خان نے انہیں حکومت میں کوئی عہدہ نہیں دیا۔ تاہم سینئر رہنماء پی ٹی آئی پر فلاح وبہبود کی خاطر سیاسی کام کرنے پر کوئی پابندی نہیں ہے،وزیراعظم عمران خان انہیں کابینہ کے اجلاس میں بلا کرزرعی شعبے کی ترقی کیلئے بریفنگ بھی لیتے ہیں،حکومتی اور سیاسی امور میں ان سے مشاورت بھی کرتے ہیں۔لیکن دوسری جانب پی ٹی آئی کے کچھ سینئر رہنماء جن میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کھل کربات کردیتے ہیں کہ جہانگیرترین کو سیاسی معاملات اور حکومتی امور سے دور رہنا چاہیے۔شاہ محمود قریشی کے اس بیان پر جہانگیرترین سمیت پارٹی کے بعض رہنماؤں اور وزراء نے وزیرخارجہ کو شدید تنقید کا نشانہ بھی بنایا۔جس پر وزیراعظم عمران خان نے جہانگیرترین اور شاہ محمود قریشی کو بیان بازی سے روکتے ہوئے تمام اختلافات کوپارٹی کے پلیٹ فورم پر حل کرنے کی ہدایت کی۔

متعلقہ خبریں