وفاقی کابینہ کے اجلاس کی اندرونی کہانی کی تفصیلات سامنے آگئیں

2019 ,مارچ 7



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک): وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہونے والے وفاقی کابینہ کے اجلاس کی اندرونی کہانی کی تفصیلات سامنے آگئیں ۔  وزیراعظم کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس 3 گھنٹے سے زائد جاری رہا۔اجلاس میں وزیراعظم نے وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا کے بیان کا نوٹس لیتے ہوئے ان کی سرزنش کی اور کہا کہ فیصل واوڈا آپ وفاقی وزیر ہیں، سوچ سمجھ کر بات کیا کریں۔وزیراعظم عمران خان نے فیصل واوڈا کو آئندہ الفاظ کے چناؤ اور ادائیگی میں احتیاط سے کام لینے کی ہدایت کی۔وزیراعظم نے اجلاس میں دیگر وزراء کو بھی اپنی گفتگو کے دوران اخلاقیات کا دامن نہ چھوڑنے کی ہدایت کی۔نجی ٹی وی کے مطابق  وزیراعظم کا کہنا تھا کہ وزراء پر بھاری ذمہ داری ہے حکومت کے اصلاحاتی ایجنڈے پر عمل تیز کریں، وزارتیں اور محکمے اہداف بروقت مکمل کریں۔وزیراعظم نے تمام وزراء کو میڈیا اور عوامی اجتماعات میں ذمہ دارانہ گفت گو کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ تمام وزارتیں اور متعلقہ محکمے اپنی رپورٹس بروقت بھجوائیں۔

دریں اثناء وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے کہاکہ کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی پر اپوزیشن کو اعتماد میں لیا جائے گا۔ فواد چوہدری نے کہا کہ پاکستان میں بھارتی جارحیت کے خلاف پیدا ہونے والا اتفاق رائے حوصلہ افزا ہے اور حکومت قومی مفاد میں اہم فیصلے کرتے ہوئے اس اتفاق رائے کو مزید مستحکم کرنا چاہتی ہے۔انہوں نے کہا کہ کابینہ نے فیصلہ کیا ہے کہ کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی سے متعلق حکمت عملی پارلیمانی رہنماؤں کے ساتھ مشاورت سے وضع کی جائے گی اور انہیں اعتماد میں لیا جائے گا۔فواد چوہدری نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں نے 2014 میں بنائے گئے قومی لائحہ عمل پر دستخط کیے جس میں یہ شق شامل ہے کہ پاکستان کی سرزمین کسی بھی ملک کے خلاف استعمال نہیں ہوگی۔ان کا کہنا تھا کہ ملک میں کالعدم تنظیموں کی سرگرمیوں پر پہلے ہی پابندی عائد ہے، تاہم فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کے مطالبات پر عملدرآمد یقینی بنانے کے لیے مزید اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔وزیر اطلاعات نے کہا کہ وزیر اعظم نے حکومت پنجاب کو ہدایات دی ہیں کہ سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف کو علاج کی بہترین سہولیات فراہم کی جائیں، وہ جس ڈاکٹر یا ہسپتال سے علاج چاہتے ہیں انہیں وہاں منتقل کیا جائے اور میڈیکل بورڈ کی سفارشات پر مکمل عملدرآمد کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ عمران خان کا کہنا تھا کہ کہیں بھی یہ شائبہ نہیں ہونا چاہیے کہ حکومت انتقامی کارروائی کر رہی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم کی ہدایت سے ظاہر ہوتا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت کی کسی شخص کے ساتھ کوئی ذاتی دشمنی نہیں ہے۔فواد چوہدری نے کہا کہ نواز شریف اور سابق صدر آصف علی زرداری کے خلاف بدعنوانی کے مقدمات گزشتہ حکومتوں کے ادوار میں قائم کیے گئے اور موجودہ حکومت کا ان مقدمات سے کوئی تعلق نہیں۔

انہوں نے کہا کہ نیب میں بھی تقرریاں گزشتہ دور حکومت میں ہوئیں تاہم حکومت کسی بھی بااثر شخصیت کے مفاد میں انصاف کی راہ میں روکاوٹ نہیں بنے گی اور نہ ہی نیب کے کام میں مداخلت کرے گی۔وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ اجلاس میں حکومت کی تمام اہم کامیابیوں اور مقرر کردہ اہداف کا جائزہ لیا گیا۔ان کا کہنا تھا کہ کابینہ نے اپنے اجلاس میں اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کے 26 فروری کے فیصلوں کی منظوری دی۔عاصم سعید کو پاکستان سافٹ وئیر ایکسپورٹ بورڈ کا مینیجنگ ڈائریکٹر مقرر کرنے، سید جاوید کی پاکستان ریونیو آٹومیشن لمیٹڈ (پرال) میں تعینات کرنے، دیگر اداروں میں تعیناتیوں اور ایئربلو کے لائسنس کی تجدید کی منظوری دی گئی۔اجلاس میں اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے وزرائے خارجہ اجلاس میں سامنے آنے والے معاہدوں پر دستخط کی بھی منظوری دی۔کابینہ نے اہم شعبوں میں پیشرفت پر اطمینان کا اظہار بھی کیا۔فواد چوہدری نے کہا کہ وزارت قانون، انسانی حقوق کے حوالے سے مختلف بلوں پر کام کر رہی ہے اور یہ بل جلد پارلیمنٹ میں پیش کیے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے معاشرے کے نادار طبقے کو مہنگائی سے نجات دلانے کے لیے پالیسیاں وضع کرنے پر زور دیا، اس سلسلے میں غربت کے خاتمے کے پروگرام کو حتمی شکل دی جارہی ہے جس کا جلد اعلان کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں