چاردن کی چاندنی پھراندھیری رات ۔۔۔ تحریک لبیک پھرسے مشکل میں ، خادم رضوی کو رہائی کے بعد دوبارہ زوردرا جھٹکا مل گیا

2019 ,مئی 27



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) الیکشن کمیشن میں تحریک لبیک پاکستان کی فنڈنگ کی تحقیقات ،سکروٹنی کمیٹی نے امیر تحریک لبیک خادم رضوی کو طلب کر لیا۔ الیکشن کمیشن نے خادم رضوی کو منگل کو سکروٹنی کمیٹی کے سامنے پیش ہونے کا حکم دیا۔ نوٹس میں کہاگیاکہ خادم رضوی ذاتی حیثیت یا انکا نمائندہ کل سکروٹنی کمیٹی کے سامنے پیش ہوں۔ذرائع کے مطابق الیکشن کمیشن کے حکم پر سکروٹنی کمیٹی تحریک لبیک پاکستان کے پارٹی فنڈنگ ذرائع کی تحقیقات کر رہی ہے، واضح رہے کہ الیکشن کمیشن میں تحریک لبیک پاکستان کی فنڈنگ کی تحقیقات ،سکروٹنی کمیٹی نے امیر تحریک لبیک خادم رضوی کو طلب کر لیا ہے۔ یاد رہے کہ پاکستان کے صوبہ پنجاب کی لاہور ہائی کورٹ نے مذہبی جماعت تحریک لبیک پاکستان کے رہنماؤں خادم حسین رضوی اور پیر افضل قادری کی درخواست ضمانتوں پر فیصلہ سناتے ہوئے ان کی ضمانت منظور کر لی ہے۔عدالت نے پیر افضل قادری کی ضمانت 15 جولائی تک منظور کرتے ہوئے ان کی رہائی کا حکم دیا۔لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس قاسم علی خان اور جسٹس اسجد جاوید گھرال پر مشتمل بنچ نے یہ فیصلہ سنایا۔لاہور ہائی کورٹ کے بنچ نے دلائل مکمل ہونے پر 10 مئی کو فیصلہ محفوظ کیا تھا۔ عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے خادم حسین رضوی اور پیر افضل قادری کو پانچ پانچ لاکھ کے مچلکے جمع کرانے کا حکم بھی دیا۔یاد رہے کہ انھیں مسیحی خاتون آسیہ بی بی کی توہین مذہب کے مقدمے میں رہائی کے بعد ملک بھر میں مظاہرے کرنے اور املاک کو نقصان پہنچانے کے الزامات میں گرفتار کیا گیا تھا، سوشل میڈیا پر جاری کیے گئے ایک ویڈیو بیان میں تحریکِ لبیک کے ترجمان پیر اعجاز اشرفی نے بتایا کہ لاہور ہائی کورٹ کے ڈیویژن بنچ نے خادم حسین رضوی اور پیر افضل قادری کی ضمانت منظور کر لی گئی ہے۔ اور اب یہ خبر آئی ہے۔

متعلقہ خبریں