برطانوی وزیراعظم ٹریزا مے کا استعفیٰ ۔۔۔۔ پوری دنیا کو حیرت میں ڈال دینے والی خبر

2019 ,مئی 12



لندن (مانیٹرنگ ڈیسک ) سینئر برطانوی قانون ساز نے بتا یا ہے کہ برطانوی وزیر اعظم ٹریزامے آئندہ ہفتے استعفےٰ دینے کی تاریخ کا اعلان کر سکتی ہیں ،وہ آئندہ ہفتے قدامت پرست قانون سازوں کے اہم گروپ سے ملاقات کرنیوالی ہیں ، پارلیمنٹ میں بریگزٹ ڈیل کی ناکامی کے بعد بدھ کو وہ صورتحال واضح کر دینگی تاہم ان کا کہنا تھا کہ یہ عجیب ہو گا کہ ملاقات کے آخر میں یہ پتہ نہ چلے کہ وہ کب ایوان اقتدار چھوڑ کر جا رہی ہیں ۔ دوسری جانب خبر کے مطابق برگزٹ کی وجہ سے اشیا ساز اداروں کی جانب سے اشیا ذخیرہ کرنے کی وجہ سے رواں سال کی پہلی سہہ ماہی کے دوران برطانوی معیشت میں بہتری ریکارڈ کی گئی ہے۔ رواں سال کی پہلی سہ ماہی کے دوران معیشت میں نمو کی شرح 0.5 فیصد ریکارڈ کی گئی جبکہ اس سے قبل کی سہ ماہی کے دوران شرح نمو 0.2 فیصد ریکارڈ کی گئی تھی۔ قومی شماریات دفتر کا کہنا ہے کہ مینوفیکچرنگ سیکٹر نے 1988 کے بعد سے سب سے زیادہ ترقی کی ہے۔ قومی شماریات کے دفتر کا کہنا ہے کہ اس کا سبب یہ ہے کہ مینوفیکچرنگ سیکٹر بریگزٹ کی حتمی تاریخ سے قبل اپنے آرڈرکی تکمیل کر رہے ہیں۔ سب سے زیادہ متاثر دواسازی کا شعبہ ہوا ہے، جس میں جنوری سے مارچ کے دوران 9.4 فیصد اضافہ ہوا۔ اگر برطانیہ عبوری ڈیل کے بغیر یورپی یونین سے علیحدگی اختیار کرتا ہے تو اس بات کا خدشہ ہے کہ برطانوی سرحدوں پر مال کی آمدورفت میں تاخیر ہوسکتی ہے۔ بریگزٹ کی تاریخ جتنی قریب آتی جارہی ہے، درآمدات میں اضافہ ہو رہا ہے۔ جس سے تجارتی خسارے میں اضافہ ہو رہا ہےاور سال رواں کی پہلی سہ ماہی کے دوران درآمد وبرآمد کا فرق دگنا ہوگیا ہے۔ قومی شماریات کے علیحدہ سے جاری کردہ اعداد وشمار کے مطابق تجارتی خسارہ 8.9 بلین پونڈ سے بڑھ کر 18.3بلین پونڈ ہوگیا ہے۔ تجارتی خسارے میں اضافے کا ایک بڑا سبب کاروں اور سونے کی درآمد میں اضافہ ہے۔

متعلقہ خبریں