بڑا الرٹ جاری ۔۔۔۔ لاہور کے کن مقامات کو دہشت گردوں کا ٹارگٹ قرار دے دیا گیا ؟ تشویشناک بریکنگ نیوز

2019 ,مئی 12



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) سانحہ داتا دربار کے بعد لاہور پولیس نے شہر کے 1025 مقامات کو حساس قرار دیتے ہوئے ان مقامات کے سکیورٹی آڈٹ کا فیصلہ کیا گیا ہے ، ان مقامات پر سرکاری دفاتر، (باقی صفحہ 5نمبر14) سرکاری رہائش گاہیں، مسیحی اور مسلمان عبادت گاہیں شامل ہیں جبکہ سانحہ داتا دربار، ہاتھ کے انگوٹھے اور انگلیوں سے خودکش دہشتگرد کی شناخت نہ ہو سکی۔ نادرا نے رپورٹ فرا نزک لیب اور متعلقہ اداروں کو بھجوا دی۔ دریں اثنا مبینہ سہولت کار لڑکے نے اپنی بے گناہی کی ویڈیو جاری کر دی۔اپنی ویڈیو میں کہا کہ ہم ایمن آباد کے رہائشی ہیں، میں صرف داتا صاحب دعا مانگنے کے لیے گیا تھا اسی اثنا میں دھماکہ ہو گیا تو میں بھی گھبرا گیا اور دوڑ لگا دی۔میڈیا میں مجھے دہشت گرد کہا جا رہا ہے جو زیادتی ہے ۔ دوسری طرف ترجمان سی ٹی ڈی کا کہنا ہے کہ سی ٹی ڈی نے دھماکے کے حوالے سے ابھی تک کوئی پریس ریلیز جاری نہیں کی ، میڈیا اپنی تفتیشی خبریں چلانے سے اجتناب کرے ۔ 23 زخمی میو ہسپتال سے ڈسچارج کردئیے گیے ۔ لاہور(کرائم رپورٹر،سپیشل رپورٹر ) آئی جی ،ڈی آئی جی آپریشنز،سی سی پی او لاہور تعزیت کیلئے شہید اہلکاروں کے گھر گئے ،فاتحہ خوانی کی ۔ قصورکے نواحی علاقہ مصطفیٰ آباد میں شہید ایلیٹ فورس کے ہیڈ کانسٹیبل شاہد نذیر کے گھر آمد پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آئی جی پنجاب کیپٹن (ر) عارف نواز خان نے کہا ہے کہ پنجاب پولیس مستقبل میں بھی کسی قسم کی قربانی سے دریغ نہیں کرے گی ۔ سی سی پی او لاہور بی اے ناصر نے قصور میں سانحہ داتا دربار کے دو پولیس شہدا کانسٹیبل صدام اور رستم علی خان کے گھر جا کے تعزیت کا اظہار کیا۔ ڈی آئی جی آپریشنز لاہور اشفاق خان شہید ہیڈ کانسٹیبل محمد سہیل کے اہل خانہ سے تعزیت کے لئے ان کے آبائی گھر نوشہراں ورکاں کے گائوں متاں کلاں گئے اور اہلخانہ سے ملاقات کی اورمحمد سہیل کی شہادت پر اظہار تعزیت کیا۔ آ ئی جی نے کرایہ داری اندراج ایکٹ پر عمل درآمدمیں سستی پر اظہار برہمی کرتے ہوئے صوبے کے تمام فیلڈ آفیسرز کو اپنے اضلا ع میں کرایہ داروں کے پولیس سسٹم میں اندراج کو یقینی بنانے کیلئے سات روزہ خصوصی مہم شروع کرنے کی ہدایت کی ہے ۔

متعلقہ خبریں