زرتاج گُل بھی نا اہل ۔۔۔ وفاقی وزیر کے لیے الیکشن کمیشن سے بُری خبر آگئی

2019 ,جون 3



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ ن نے وفاقی وزیر برائے موسمیات زرتاج گل کی نااہلی کے لیے الیکشن کمیشن سے رجوع کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن نے زرتاج گُل کی نا اہلی کے لیے الیکشن کمیشن میں درخواست دائر کر دی۔ درخواست مسلم لیگ ن کی رکن صوبائی اسمبلی حنا پرویز بٹ کی جانب سے دائر کی گئی۔ درخواست میں زرتاج گل کو اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے پر نااہل کرنے کی استدعا کی گئی۔درخواست میں کہا گیا کہ وفاقی وزیر نے اپنے عہدے کا غلط استعمال کیا۔ وفاقی وزیر نے اپنی بہن کو نیکٹا میں تعینات کروانے کے لیے اثر و رسوخ استعمال کیا۔ زرتاج گل نے جھوٹ بولا کہ ان کی بہن میرٹ پر پورا اُترتی ہیں لہٰذا زرتاج گل کو اثر و رسوخ استعمال کرنے اور اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے پر نااہل قرار دیا جائے۔قبل ازیں وفاقی وزیر زرتاج گل کے خلاف آرٹیکل 62 کے تحت کاروائی کے مطالبے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کروائی گئی تھی۔قرارداد مسلم لیگ ن کی رکن عظمیٰ بخاری کی جانب سے جمع کروائی گئی۔ قرارداد کے متن میں کہا گیا کہ وفاقی وزیر زرتاج گل نے اپنے عہدے کا غلط استعمال کیا، انہوں نے سیاسی اثر رسوخ کے استعمال سے اپنی بہن شبنم گل کی بطور ڈائریکٹر نیکٹا تعیناتی کرائی، زرتاج گل نے اپنی بہن کو ڈائریکٹر نیکٹا تعینات کرانے کے لئے سیکرٹری داخلہ کو خط لکھا، شبنم گل کا انسداد دہشتگردی میں نہ کوئی تجربہ اور نہ کوئی ریسرچ ہے۔قرارداد میں مزید کہا گیا شبنم گل لاہور کالج برائے خواتین یونیورسٹی میں بطور اسسٹنٹ پروفیسر تعینات تھی جبکہ شبنم گل 9 سال بعد بھی اپنی پی ایچ ڈی مکمل نہیں کر سکیں، وفاقی وزیر برائے ماحولیاتی زرتاج گل کے خلاف آرٹیکل 62 ون کے تحت کاروائی عمل میں لائی جائے، زرتاج گل ماحولیات جیسی اہم وزارت کی اہل نہیں رہی، ان کو فی الفور نا اہل قرار دیا جائے۔یاد رہے کہ یکم جون کو زرتاج گل وزیر کی اسسٹنٹ پروفیسر بہن شبنم گل کو ڈائریکٹر نیکٹا تعینات کرنے متعلق خبریں منظر عام پر آئی تھیں۔ جس کے بعد وزیراعظم عمران خان نے معاملے پر ناراضگی کا اظہار کیا تھا۔ وزیر اعظم عمران خان نے زرتاج گل کی بہن کی نیکٹا کے ڈائریکٹر کے عہدے پر تعیناتی کے معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے زرتاج گل کو نیکٹا کو لکھے گئے خط سے دست بردار ہونے کی ہدایت کی تھی۔

متعلقہ خبریں