شاندار خبر : بیرون ملک پاکستانیوں نے عمران خان کا دل خوش کر دیا ، تفصیلات جان کر آپ بھی جھوم اٹھیں گے

2019 ,مئی 19



کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) بیرون ملک مقیم پاکستانی کارکنوں نے مالی سال 19 کے پہلے دس ماہ(جولائی تا اپریل)میں 17,875.23 ملین امریکی ڈالر وطن بھجوائے جو گذشتہ برس کی اسی مدت میں موصول ہونے والے 16,481.82 ملین ڈالر کے مقابلے میں 8.45 فیصد نمو کو ظاہر کرتا ہے۔ اپریل 2019 میں کارکنوں کی ترسیلات زر کی مالیت 1,778.90 ملین ڈالر رہی جومارچ 2019 کے مقابلے میں 2 فیصد زائد جبکہ اپریل 2018 کے مقابلے میں 6 فیصدزیادہ ہے۔ بلحاظ ملک اپریل 2019 کی تفصیلات سے پتہ چلتا ہے کہ سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، امریکہ، برطانیہ، خلیج تعاون کونسل خلیج تعاون کونسل کے ملکوں بشمول بحرین، کویت، قطر اور عمان اور یورپی یونین کے ملکوں سے بالترتیب 427.82 ملین ڈالر،372.43 ملین ڈالر،269.56 ملین ڈالر،280.02 ملین ڈالر، 175.44 ملین ڈالر اور 48.19 ملین ڈالر پاکستان بھجوائے گئے،جبکہ اپریل 2018 میں ان ملکوں سے آنے والی رقوم بالترتیب 399.56ملین ڈالر،362.4 ملین ڈالر، 250.91 ملین ڈالر،245.85ملین ڈالر، 167.68ملین ڈالر اور 54.75 ملین ڈالر تھیں۔ اپریل 2019 میں ملائشیا، ناروے، سوئٹزر لینڈ، آسٹریلیا، کینیڈا، جاپان اور دیگر ملکوں سے آنے والی ترسیلات زر مجموعی طور پر 205.43 ملین ڈالر رہیں جبکہ اپریل 2018 میں ان ملکوں سے192.72ملین ڈالر موصول ہوئے تھے۔ بیرون ملک مقیم پاکستانی کارکنوں نے مالی سال 19 کے پہلے دس ماہ(جولائی تا اپریل)میں 17, 875.23ملین امریکی ڈالر وطن بھجوائے جو گذشتہ برس کی اسی مدت میں موصول ہونے والے 16, 481.82ملین ڈالر کے مقابلے میں 8.45 فیصد نمو کو ظاہر کرتا ہے۔دوسری جانب خبر یہ ہے کہ اسٹیٹ بینک کی جانب سے نئے کرنسی نوٹ جاری کرنے کے لیے ایس ایم ایس سروس کے ذریعے بکنگ آج ( اتوار) سے شروع ہو گی ۔نئے نوٹ کمرشل بینکوں کی نامزد شاخوں سے دستیاب ہوں گے جو ’’ای برانچز ‘‘ کہلاتی ہیں، اس کے علاوہ ایس بی پی بی ایس سی کے 16فیلڈ دفاتر سے بھی نئے کرنسی نوٹ حاصل کیے جا سکیں گے۔ موبائل ایس ایم ایس سروس کے ذریعے نئے نوٹوں کا اجرا 20 مئی 2019 سے شروع ہوگا اور 31 مئی 2019 تک جاری رہے گا۔ ملک کے 142 شہروں میں 1702 ای برانچز اور ایس بی پی بی ایس سی کے 16 فیلڈ دفاتر کے ذریعے یہ سہولت فراہم کی جائے گی – ایک ایس ایم ایس پر چارجز 1.50 روپے جمع ٹیکس ہوں گے۔نامزد ای برانچوں کی برانچ آئی ڈی اسٹیٹ بینک کی ویب سائٹ ، پی بی اے کی ویب سائٹ  اور کمرشل بینکوں کی ویب سائٹ پر دستیاب ہے۔اس کے علاوہ یہ برانچ آئی ڈی نامزد ای برانچوں کے باہر نمایاں مقام پر آویزاں کی جائے گی۔ ای برانچ کی برانچ آئی ڈی موجودہ برانچ/ بینکوں کے سوئفٹ کوڈسے مختلف ہے۔طریق کار کے مطابق نئے نوٹ حاصل کرنے کے خواہشمند فرد کو اپنا 13 ہندسوں والا کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ نمبر یا اسمارٹ کارڈ نمبر اور مطلوبہ ای برانچ کی آئی ڈی لکھ کر شارٹ کوڈ 8877پر ایک ایس ایم ایس پیغام بھیجنا ہوگا ۔ بھیجنے والے فرد کو جواب میں ایک ایس ایم ایس موصول ہوگا جس میں اس کا ریڈیمشن کوڈ، ای برانچ کا پتہ اور ریڈیمشن کوڈ کے موثر ہونے کا عرصہ لکھا ہوگا۔ صارف کو موصولہ ریڈیمشن کوڈ ایس ایم ایس میں درج تاریخ کے مطابق زیادہ سے زیادہ دو ایام کار کے لیے موثر ہوگا۔ صارف کو اپنا اصل کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ/ اسمارٹ کارڈ، اس کی ایک فوٹو کاپی اور 8877سے موصولہ ٹرانزیکشن کوڈ لے کر متعلقہ ای برانچ جانا ہوگا جہاں سے نئے نوٹ مل جائیں گے۔ ایک شخص 10روپے کے تین پیکٹ اور 50 روپے اور 100روپے کے ایک ایک پیکٹ لے سکتا ہے۔

متعلقہ خبریں