’’ عمران خان پنجاب میں ون مین شو بن گئے ‘‘ وزیر اعظم عُثمان بُزدار کو کیا کہہ رہے ہیں؟ حقیقت سامنے آگئی

2019 ,اپریل 12



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک ) پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنماؤں نے وزیراعظم عمران خان پر صوبائی خودمختاری میں مداخلت کا الزام عائد کردیا۔ ن لیگی رہنماؤں نے کہا کہ عمران خان صوبائی خود مختاری میں مداخلت کرتے ہیں، وزیراعلیٰ پنجاب وزیراعظم کے اسیر ہیں، عمران خان پنجاب میں ون مین شو بن گئے ہیں۔ ن لیگی رہنماؤں ملک احمد خان نے عظمیٰ بخاری کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ چیئرمین نیب کو نہ قانون یاد ہے اور نہ اخلاقیات یاد ہیں۔انہوں نے کہا کہ شہزاد اکبر خود ایف آئی اے کے دفتر جاکر کیسز بنواتے ہیں۔ انہوں نے سوال کیا کہ علیمہ باجی کے خلاف کیس کیوں نہیں چلایا جا رہا۔ عمران خان دوسروں کے اکاؤنٹس کی چھان بین کرتے ہیں اپنے 18اکاؤنٹس کا بھی بتا دیں۔اس موقع پر ملک احمد نے کہا کہ ہم احتساب کے عمل سے بھاگے نہیں، سوال پر جواب دینے کیلیے ہر وقت تیار ہیں۔ بڑے میاں صاحب عدالت کے حکم پر جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے۔میاں صاحب اپنی بیمار اہلیہ کو چھوڑ کر پاکستان آئے۔ انہوں نے کہا کہ ہائیکورٹ کے آرڈرکے باوجود حمزہ شہباز کی گرفتاری کیلئے چھاپا مارا گیا۔ حمزہ شہباز کے بارے میں نیب خود کہہ چکا تھا کہ ان کی گرفتاری مقصود نہیں۔ عدالتی مداخلت پر نیب اہلکار حمزہ شہباز کی رہائش گاہ سے واپس گئے۔ حمزہ شہبازپرکرپشن کے الزامات نہیں۔ ملک احمد نے کہا کہ حمزہ شہباز نے نیب کے تمام سوالات کے جواب دیے۔نیب نے جو سوال پوچھا اس کا جواب دیا۔ ملک احمد نے کہا کہ نیب خود کہہ چکا کہ حمزہ شہباز تعاون کرتے رہے۔ حمزہ شہباز پر کرپشن کا نہیں ترسیلات زر کا الزام لگایا گیا ہے۔ حمزہ شہبازپر85 کروڑ کا الزام ہائیکورٹ پہنچ کر3 کروڑ تک رہ گیا ہے۔ نیب انہوں نے کہا کہ عمران خان صوبائی خود مختاری میں مداخلت کرتے ہیں۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار اسیر ہیں۔ عمران خان ون مین شو بن کر پنجاب میں مداخلت کر رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں