ڈالرکودیکھتے ہی یورو،برطانوی پائونڈنے بھی رفتارپکڑلی ،قدرمیں کتنااضافہ ہوگیا ؟

2019 ,مئی 19



کراچی( مانیٹرنگ ڈیسک) ایک ہفتے کے دوران انٹر بینک اور مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر 6روپے کے اضافے سے ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر جا پہنچی ہے جس کی وجہ سے فاریکس مارکیٹ میں بھونچال رہاجبکہ روپیہ بدترین گراوٹ کا شکار دکھائی دے رہا ہے۔ فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ ایک ہفتے کے دوران انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر میں6.75روپے کا نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے ڈالر کی قیمت خرید 141.40روپے سے بڑھ کر147.75روپے اور قیمت فروخت 141.51 روپے سے بڑھ کر148.25روپے پر جا پہنچی اسی طرح اسی مدت کے دوران مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں6.50روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ۔یاد رہے کہ خبر یہ تھی کہ روپے کی مسلسل بے قدری اور ڈالر کی اونچی اڑان کا سلسلہ جاری ہے اور آج ایک مرتبہ پھر انٹر، اوپن مارکیٹ میں ڈالر مہنگا ہوگیا۔اوپن مارکیٹ میں ڈالر مزید4 روپے مہنگا ہونے کے بعد 151روپے کا ہوگیا جبکہ انٹر بینک میں ڈالر ایک روپے 35 پیسے مہنگا ہونے کے بعد ایک ڈالر 147 روپے 87 پیسے کا ہو گیا۔دوسری طرف پاکستان اسٹاک ایکسچنج کے 100 اینڈیکس میں آج 804 پوائنٹس کی کمی ہوئی اور پی ایس ایکس 100 انڈیکس 33 ہزار 166 پوائنٹ کی سطح پر آگیا ہےانٹر بینک میں کاروبار کے دوران ڈالر 1 روپے 35 پیسے مہنگا ہو کر 147.87 روپے کا ہوگیا جب کہ انٹر بینک میں ڈالر کی خریداری قیمت 147 روپے ہوگئی۔گزشتہ روز کاروبار کے اختتام پر انٹر بینک مارکیٹ میں امریکی ڈالر مجموعی طور پر 5.13 روپے اضافے کے بعد 146.52 پر بند ہوا تھا۔دوسری جانب پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں بھی کاروبار کے دوران منفی رجحان دیکھا گیا جہاں کاروباری ہفتے کے آخری روز بھی 100 انڈیکس میں 804 پوائنٹس کی کمی رہی اور پاکستان اسٹاک ایکسچینج کو 33 ہزار 166 پر بند کردیا گیا۔

متعلقہ خبریں