”بدقسمتی سے وزیر اعظم کے خطاب میں یہ چیز نظر نہیں آئی“، تجزیہ کار سلیم صافی کی مایوسی

2019 ,اگست 26



اسلام آباد (مانیٹرنگ رپورٹ) تجزیہ کار سلیم صافی نے کہا ہے وزیراعظم کے خطاب میں ایک روڈ میپ ہونا چاہئے تھا جو بدقسمتی سے ہم کو نظر نہیں آیا ، نواز شریف اور آصف زرداری نے یہ نہیں کہا تھا کہ وہ ٹیپو سلطان کے پیروکار ہیں اور نہ ریاست مدینہ کی بات کی تھی ۔ جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگوکرتے ہوئے سلیم صافی نے کہا کہ نواز شریف اور آصف زرداری نے یہ نہیں کہا تھا کہ وہ ٹیپو سلطان کے پیروکار ہیں اور نہ ریاست مدینہ کی بات کی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ جب واجپائی خود چل کر لاہورآگیا تھا اور کشمیر پر اس سے بہتر پیکج دے رہا تھا تو کون تھا جس نے پرویز مشرف کوہیرو قراردیا تھا؟

    ان کا کہنا تھا کہ اگر مسئلہ کشمیر کواسلام اور کفر کی جنگ بناتے ہیں توپھر مغرب آپ کاساتھ کیوں دے ؟ کشمیری اپنی جانوں کی قربانیاں دے رہے ہیں تو ہم ان کے ساتھ اپنی اناﺅں کی قربانیاں کیوں نہیں دے سکتے؟ ٹرمپ کی مودی سے ملاقات ہوگئی ہے تو اس ملاقات سے پاکستان کے حق میں کیانکلا ہے؟ سلیم صافی نے کہاہے کہ وزیراعظم کے خطاب میں ایک روڈ میپ ہونا چاہئے تھا جو بدقسمتی سے ہم کو نظر نہیں آیا ۔

    متعلقہ خبریں