No Feild Marshal No Extention

تحریر: فضل حسین اعوان

| شائع اکتوبر 20, 2016 | 13:29 شام


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) اسلام آباد ہائی کورٹ نے آرمی چیف چیف جنرل راحیل شریف کو فیلڈ مارشل بنانےکی درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر خارج کر دی ہے۔عدالت عالیہ کے جسٹس عامر فاروق نے شہری عدنان سلیم کی جانب سے دائر درخواست پر سماعت کی۔ درخواست گزار کی جانب سے موقف اپنایا گیا تھا کہ آ رمی چیف کو فیلڈ مارشل بنایا جائے اس کا کہنا تھا کہ آرمی چیف کے خاندان نے بے پناہ قربانیاں دی ہیں جن کی بنا پر راحیل شریف کو فیلڈ مارشل بنایا جانا چاہئے تاکہ راحیل شریف ملکی حالات کے پیش نظر اپنا کام جاری رک

ھ سکیں۔دوران سماعت عدالت نے درخواست گزار سے استفسار کیا کہ کیا آئین میں فیلڈ مارشل بنائے جانے کی گنجائش ہے؟جس پرخواست گزار نے عدالت کا آگاہ کیا کہ آئین میں گنجائش موجود نہیں تاہم جنرل ایوب کی مثال موجود ہے،عدالت نے درخواست کے قابل سماعت ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ کر لیا تھا مگر اب اس درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کر دیا ہے۔دریں اثنا آرمی چیف کی طرف سے اگلے ماہ اپنی ریٹائر منٹ کے واضح اشارے سامنے آئے ہیں۔جن کی بنیادپر کہا جستا ہے کہ راحیل شریف آئندہ ماہ اپنی ریٹائرمنٹ کے حوالے سے مکمل طور پر تیار ہیں۔نجی ٹی وی پروگرام میں سینئر تجزیہ نگار نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جنرل راحیل شریف نے ایک میٹنگ میں جوان سے حال احوال پوچھا تو جوان نے کہا کہ میں تو ریٹائرڈ ہو رہا ہوں جس پر جنرل راحیل شریف ہنسے اور کہا کہ ڈیڑھ ماہ بعد میں بھی ریٹائرڈ ہو رہا ہوں، مل کر کوئی کام شروع کریں گے۔