شمالی کوریا سے مذاکرات کا مخالف نہیں۔ حالات موزوں ہونے چاہئیں۔ ٹرمپ

2017 ,مئی 15



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک): شکر ہے جناب ٹرمپ کی عقل ٹھکانے آ گئی۔ یہ سب کمال ہے شمالی کوریا کی مضبوط قیادت کا جو ڈٹ گئی۔ بدمست ہاتھی جیسی امریکی قیادت کے سامنے۔ بے شک لوگوں کے نزدیک شمالی کوریا کی حیثیت اس کے مقابلے میں چیونٹی سی بھی نہیں تھی۔ مگر یہ وہ چیونٹی بن گئی جو ہاتھی کی سونڈ میں گھس گئی تھی۔ کہاں شمالی کوریا کو نیست و نابود کرنے کی دھمکیاں اور کہاں مذاکرات پر آمادگی کا اعلان۔ یہ ہوتی ہے قومی قیادت کی دھاک جو دشمنوں کے دلوں پر جا بیٹھتی ہے۔ کیا کچھ نہیں کہا امریکہ بہادر نے بحری بیڑہ تک بھیج دیا سمندر میں‘ شمالی کوریا کی طرف سے بین البراعظمی ایٹمی میزائل کے تجربات کو روکنے کے لئے۔ مگر شمالی کوریا کے سربراہ ڈٹ گئے پورے ملک کو دفاعی زون میں بدل دیا۔ کہہ دیا ہم مٹ جائیں گے مگر امریکہ کو سبق سکھا جائیں گے۔ یہ عزم دیکھ کر اب ٹرمپ جیسے سر پھرے جو پوری دنیا کو خاطر میں نہیں لاتے۔ آج شمالی کوریا سے حالات موزوں ہونے پر مذاکرات کی بات کر رہے ہیں۔ خدا کرے یہ عزم و حوصلہ ہمارے حکمرانوں کو بھی نصیب ہو۔ وہ بھی قومی سلامتی‘ ملکی دفاع اور مسئلہ کشمیر پر ایسا ہی سٹینڈ لیں جیسا شمالی کوریا کے صدر نے لیا ہے‘ تو دنیا دیکھے گی کہ بھارت کس طرح حالات بہتر نہیں بناتا اور کشمیر پر مذاکرات کے لئے آمادہ نہیں ہوتا۔ خفیہ سفارتکاری کمزور مؤقف رکھنے والوں کے ڈھکوسلے ہیں مضبوط اور توانا مؤقف رکھنے والے کبھی چھپ کر ملاقاتیں نہیں کرتے جو کہتے ہیں ڈنکے کی چوٹ پر وہ کرتے بھی ہیں…

متعلقہ خبریں