تندیٔ بادِ مخالف سے نہ گھبرا اے عقاب

2017 ,جولائی 5



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک): لگتا ہے پر کٹ گئے ہیں مگر نیب سندھ کی قوت پرواز ابھی متاثر نہیں ہوئی۔ ویسے بھی جب تک چونچ اور پنجے موجود ہیں، نیب کی شکار کی صلاحیتیں زیادہ متاثر نہیں ہوں گی۔ کیونکہ شکار کو پکڑنے اور نوچنے کے لئے چونچ اور پنجے ہی کافی ہوتے ہیں، اب ان کو کون کترے گا۔ وہ کہتے ہیں ناں

تندیٔ بادِ مخالف سے نہ گھبرا اے عقاب

یہ تو چلتی ہے تجھے اونچا اڑانے کے لئے

ڈی جی نیب کی طرف سے جاری کیسوں پر کام جاری رہنے کے اعلان سے اندازہ ہوتا ہے کہ وہ فی الحال سندھ اسمبلی میں نیب کے خاتمے کے بل کی منظوری سے زیادہ پریشان نہیں ہیں، الٹا ان 500 کیسوں میں ملوث افراد کو ڈرا رہے ہیں جن کے کیس انکے پاس زیرتفتیش ہیں۔ اب ان کیسوں میں ملوث افراد حیران ہیں کہ نیب کے خاتمے پر مٹھائیاں بانٹیں یا ڈی جی کی طرف سے کیسوں کے چلنے والے بیان کاماتم کریں، کیونکہ جب تک یہ کیس موجود ہیں، خوف کی تلوار ان پر لٹکتی رہے گی۔ ان کیلئے تو یہ فیصلہ اس دودھ کی طرح ہے جس میں مینگنیاں ڈال دی گئی ہوں۔ اپوزیشن والوں نے تو کل ہی سندھ اسمبلی میں اس بل کی منظوری کے خلاف جس طرح احتجاج کیا، اس سے معلوم ہوتا ہے کہ وہ بھی نچلے نہیں بیٹھیں گے۔ ہر جگہ ہرممکن طریقہ سے کرپشن کے فروغ اور کرپٹ عناصر کے دفاع کیلئے سندھ حکومت کے احسن اقدامات کیخلاف عوام کو، میڈیا کو ہوشیار اور بیدار کرتے رہیں گے۔

متعلقہ خبریں