وزیراعلیٰ پنجاب نے ارکان پارلیمنٹ کے اجلاس میں تلاوت خود کی ۔

2017 ,جون 2



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک): شریف خاندان کے دینی شغف سے تو دنیا واقف ہے۔ حسین نواز بھی کیا خوب تلاوت کرتے ہیں۔ نعت خوانی میں بھی ان کو کمال حاصل ہے۔ ویسے تو پورا گھرانہ دینی ماحول میں رنگا ہے۔ اس کی گواہی ان کے سب سے بڑے مخالفوں میں سے ایک مولانا طاہرالقادری بھی دیتے رہے ہیں۔ مگر یہ وہ دور تھا جب مولانا شریف خاندان کے خوشہ چینوں میں سے ایک تھے۔ پھر آہستہ آہستہ تمام خوشے چن کر اپنا علیحدہ باغ بنا لیا۔ بہرحال بات ہو رہی تھی تلاوت کی ۔ گزشتہ روز گوجرانوالہ ڈویژن سے تعلق رکھنے والے ارکان پارلیمنٹ کے اجلاس سے قبل میاں شہباز شریف نے خود تلاوت کرکے اجلاس کا آغاز کیا۔ اب جو تلاوت وزیراعلیٰ نے خود کی ہے تو اس کا اثر بھی ہوا ہو گا۔ نجانے کتنے ممبران کی آنکھیں بھر آئی ہوں گی۔ کئی تو رومال سے آنسو پونچھ رہے ہوں گے۔ یہ تو اندر خانے کی باتیں ہیں کوئی کیا جانے۔ شکر ہے کہ مسلم لیگ میں کچھ لوگ ابھی بھی اسلامیات کو یاد رکھے ہوئے ہیں ورنہ ہماری سیاسی پارٹیوں میں اب اس کا چلن کم ہوتا جا رہا ہے۔ اگر ارکان پارلیمنٹ کو میٹرک کا اسلامیات کا پیپر حل کرنے کے لئے دے دیں تو شاید بہت کم ممبران پاس ہو پائیںگے۔ انہیں کیا معلوم سورۃ فاتحہ کون سی ہے اور سورۃ کوثر کون سی۔ پوری نماز تو دور کی بات ہے بہت سے تو کلمہ طیبہ دیکھ کر بھی صحیح نہ پڑھ سکیں۔

…٭…٭…٭…٭…

متعلقہ خبریں