بھارت کی من گھڑت کہانی پاک فوج نے بے نقاب کردی

2019 ,ستمبر 7



راولپنڈی(مانیٹرنگ رپورٹ) غلطی سے سرحد عبور کرتے ہوئے پکڑے جانے والے 2 بے گناہ پاکستانی شہریوں کو بھارتی فوج اور میڈیا نے من گھڑت خبر چلاتے ہوئے دہشتگرد قرار دیدیا۔ 21 اگست 2019ء کو آزاد کشمیر کے دو کسانوں 21 سالہ محمد نظیم ولد عارف حسین اور 30 سالہ خلیل احمد ولد عبدالعزیز گھاس کاٹنے گئے تھے کہ حاجی پیر کے قریب لائن آف کنٹرول عبور کر گئے تھے جس کے بارے پاکستانی حکام نے بھارت کو دو بار اس سے متعلق ہاٹ لائن پر آگاہ کیا گیا تھا۔ 4 ستمبر کو ایک من گھڑت جھوٹی کہانی گھڑتے ہوئے بھارتی فوج نے میڈیا کے سامنے عام شہریوں کو دہشت گرد بنا کر پیش کر دیا۔

 

 بے گناہ شہریوں پر بھارتی فوج کی حراست کے دوران یہ بھی دبائو ڈالا گیا کہ وہ بیان دیں کہ ان کا تعلق راولپنڈی سے ہے اور پاکستان میں انہیں تربیت دی گئی ہے۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ دونوں بھولے بسرے سے سرحد پار کرنے والے مقامی کسان ہیں اور ان کا تعلق لائن آف کنٹرول کے ساتھ واقع گائوں تربن (ہیلان) سے ہے، راولپنڈی سے نہیں۔

متعلقہ خبریں