ایک خوشخبری: پاسپورٹ پر عائد اضافی فیس میں کمی

تحریر: فضل حسین اعوان

| شائع دسمبر 20, 2016 | 12:07 شام

اسلام آباد: (مانیٹرنگ رپورٹ) پاسپورٹ پر عائد اضافی فیس واپس لینے کا فیصلہ کرلیاگیا۔پبلک ا کاونٹس کمیٹی نے پاسپورٹ فیس پر پچیس روپے اضافی وصولی پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔ پی اے سی کو بتایاگیا کہ نئی پالیسی بننے تک فشنگ کیلئے نئے لائسنس جاری نہیں کیے جائیں گے۔خورشید شاہ کی زیر صدارت پی اے سی اجلاس میں پاسپورٹ فیس پر اضافی وصولی پر شدید تنقید کی گئی۔ ارکان کمیٹی نے موقف اختیار کیا کہ عوام سے ناجائز پچیس روپے وصول کیے جارہے ہیں۔ یہ سروس فیس ہے جومکمل فیس کا ایک فیصد بنتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ صرف

نیشنل بینک ہی پاسپورٹ فیس وصول کرتا ہے۔ تمام بڑے بینکس کو پاسپورٹ فیس وصولی کا اختیار دیا جائے۔

وزارت پورٹس اینڈ شپنگ نے بتایا کہ ابھی فشنگ کے لائسنس نہیں دیے جا رہے۔ جب تک نئی پالیسی نہیں بنتی لائسنس نہیں دیے جاسکتے۔خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ کئی ممالک کے جی ڈی پی میں فشنگ سیکٹرکا بڑا کردار ہے۔فشنگ سیکٹرکا جی ڈی پی میں صرف ایک فیصد حصہ ہے۔ پی اے سی نے فشنگ سیکٹر کی بہتری کیلئے دس جنوری کو تفصیلی بریفنگ طلب کر لی۔