بھارت سے پاکستان آئی فرانسیسی لڑکی نے اپنے دورے کی ایسی تفصیلات بتادیں کہ جان کر پاکستانی خوش ہوجائیں گے

2017 ,اپریل 30



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) ایک فرانسیسی لڑکی واہگہ کے راستے بھارت سے پاکستان میں داخل ہوئی تو اس سے پاکستانی سیکیورٹی حکام نے دورے کی وجہ پوچھی تو اس نے ایسی بات بتادی کہ سیکیورٹی حکام کے چہروں پر مسکراہٹ پھیل گئی اور انہوں نے اسے جانے دیا۔


 انگریزی اخبار ڈیلی ڈان کے مطابق جوہانا مائیکل نامی اس لڑکی نے بتایا کہ ”میں اس روز پہلی بار پاکستان میں داخل ہو رہی تھی۔ واہگہ کی طرف آتے ہوئے میں نوری کا گانا سنتے ہوئے آ رہی تھی اور میرے دل کی دھڑکن تیز ہو رہی تھی لیکن اس کی وجہ خوف نہ تھا بلکہ پاکستان کو جلد از جلد دیکھنے کا اضطراب تھا۔ “

”پاکستان سے میرا پہلی بار تعارف لندن میں اپنے روم میٹس کے ذریعے ہوا۔ اس وقت میری عمر 18سال تھی۔ ان کی زبانی پاکستان کا ذکر سن سن کر مجھے پاکستان کو دیکھنے کا شدید اشتیاق تھا۔ آج میری یہ خواہش پوری ہونے جا رہی تھی۔ جیسے ہی میں واہگہ پر پہنچی تو پاکستانی سیکیورٹی حکام نے مجھے شک کی نگاہ سے دیکھا اور فوری طور پر سوالات شروع کر دیئے ’تم کہاں سے ہو؟ اکیلی سفر کر رہی ہو؟ پہلی بار پاکستان آ رہی ہو؟آنے کا مقصد کیا ہے؟‘ وغیرہ وغیرہ میں نے اطمینان سے انہیں جواب دیا کہ میں پاکستان اس لیے آئی ہوں کہ میں پاکستان کو سمجھنا چاہتی ہوں۔

میں دیکھنا چاہتی ہوں کہ پاکستان واقعی ویسا ہی ملک ہے جیسا کہ عالمی میڈیا میں بتایا جاتا ہے۔جیسے ہی میں نے یہ فقرہ کہا، تمام سیکیورٹی آفیسر مسکرانے لگے اور انہوں نے مجھے جانے کو کہہ دیا۔ آج میں پاکستان کی سیاحت کے بعد یہ کہنا چاہتی ہوں کہ عالمی میڈیا میں اس ملک کا جو تشخص پیش کیا جاتا ہے میں اس پر قطعاً اعتبار کرنے کو تیار نہیں ہوں۔ جو تصویر میڈیا دنیا کو دکھاتا ہے یہ اس سے یکسر مختلف ملک ہے۔ “ پاکستان ایک خوبصورت ملک ہے۔ لیکن اس کی خوبصورت ظاہر نہیں کی جاتی۔

متعلقہ خبریں