شوق سے نور نظر لخت جگر پیدا کرو۔۔۔۔۔۔ پہلے گندم بھی تو تھوڑی سے مگر پیدا کرو

2017 ,جولائی 13



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک): دنیا کی چھوڑیں دنیا والے جانیں یا دنیا بنانے والا۔ ہمارے لئے تو اس وقت سب سے بڑا مسئلہ ہمارے اپنے گھر یعنی پاکستان میں تیزی کے ساتھ بڑھتی ہوئی آبادی ہے۔ جس پر قابو پانے کی ہر کوشش بری طرح ناکام ہوتی نظر آتی ہے۔ خاندانی منصوبہ بندی سے لے کر بہبود آبادی کے خوبصورت ناموں کے ساتھ عوام الناس کو بہت کچھ سمجھانے کی کوشش کی گئی بچوں کی تعلیم و تربیت اور ان کی ذمہ داریوں کے لئے بڑے متاثر کن طریقے سے آزمائے گئے مگر اثر ندارد۔ بنگلہ دیش والے سمجھ گئے۔ انہوں نے اپنی بے ہنگم بڑھتی ہوئی آبادی کنٹرول کر لی وہ آج ہم سے کافی خوشحال ہے۔ مگر ہم ہیں کہ کثرت اولاد کے زعم میں، عذاب میں مبتلا ہیں۔ غربت و مفلت اور بے روزگاری کے ضمیر جعفری کیا خوب فرما گئے کہ

شوق سے نور نظر لخت جگر پیدا کرو

پہلے گندم بھی تو تھوڑی سے مگر پیدا کرو

ہم بھول جاتے ہیں کہ قیامت کے دن اوپر والا ہم سے ضرور پوچھے گا کہ جب اتنے بچوں کی اچھی پرورش نہیں کر سکتے تھے۔ انہیں اچھا انسان اور مسلمان بنا نہیں سکتے تھے تو یہ نکمی فوج کیوں پیدا کی جو کام کے نہ سماج کے دشمن اناج کے۔ صرف بچے پیدا کرنا ہی اہمیت نہیں رکھتا انہیں اچھا انسان بنانا مسلمان بنانا ان کی بہترین تربیت کرنا بھی والدین کے فرائض میں شامل ہے مگر ہمارے ہاں کوئی اس طرف آتا نہیں۔ اگر ہمیں ایک صحت مند قوم بننا ہے تو اس کے لئے آبادی کو بڑھنے سے روکنا ہو گا۔ ورنہ بے کار نکمے بیمار افلاس کا شکار بے تحاشہ ہجوم کبھی سربلند قابل فخر قوم نہیں بن سکتی۔ اسلئے ہمیں ایک مضبوط قوم بننا ہے تو لاغر نہیں صحت مند افراد تیار کرنا ہوں گے۔

٭٭٭٭٭٭

متعلقہ خبریں