پٹرول کی ایک روپے 20 پیسے ڈیزل کی قیمت میں ایک روپے 60پیسے کمی۔

2017 ,جون 3



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک): حکومت کے پٹرول اور ڈیزل کی قیمت میں معمولی کمی سے پتہ چلتا ہے یہ بھی حکومت کی طرف سے صرف عوام کو خوش کرنے کی ایک حقیر سی کوشش ہے۔ ورنہ اخبارات میں تو شور تھا کہ 2.50 روپے کمی ہو گی مگر افسوس یہ ایک روپے بیس پیسے تک ہی محدود رہی۔ اسے ہم اونٹ کے منہ میں زیرہ کہہ سکتے ہیں۔ اب یہ سمجھ نہیں آتی کہ یہ بیس پیسے کی پخ کیوں لگائی گئی ہے۔ سیدھے 50پیسے کون سی قیامت ڈھا دیتے جو یہ اضافہ ایک روپے پچاس پیسے کی بجائے 20 پیسے کیا گیا۔ چلیں ڈیڑھ نہ سہی سوا ہی سہی لوگوں کو اس موسم گرما میں کسی طرف سے ٹھنڈی ہوا کا کوئی جھونکا تو آیا۔ ورنہ ماہ رمضان کریم میں جس طرح چاروں طرف مہنگائی کی لو چل رہی ہے اس سے غریب بری طرح متاثر ہو رہے ہیں۔

یہ ماہ منافع خوروں کی وجہ سے غریبوں کیلئے مشکل سے مشکل تر بنا دیا جاتا ہے۔ اگر پٹرول کی طرح گلی محلوں میں بھی سستی اشیاء کی فراہمی خواہ وہ راشن ڈپو بنا کر ہی یقینی بنائے تو لوگ حقیقت میں اس ماہ کی برکات سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں۔ ورنہ افطار اور سحر کے وقت غریبوں کے دل سے صرف آہ ہی نکلتی ہے اور یہ بات سب جانتے ہیں۔ آہ جو دل سے نکلتی ہے اثر رکھتی ہے۔

متعلقہ خبریں