تصویر بولتی ہے

2017 ,اگست 11



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک): پشاور کا 16 سالہ ضیااللہ ایبٹ آباد روڈ آٹوز مارکیٹ میں گاڑیوں کی پوشش کا سامان گھوم پھر کر فروخت کرتا ہے۔  اس کا کہنا ہے کہ وہ دو بھائی تھے۔ بڑا بھائی حادثے میں ہلاک ہو گیا۔ والد بیمار اور بوڑھا ہے گھر میں کمانے والا کوئی نہیں۔ اس لئے وہ لاہور آ کر اس آٹو مارکیٹ میں گھوم پھر کر سامان بیچ کر گھر والوں کے لئے ذریعہ روزگار بنا ہوا ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ سارادن محنت کے بعد پانچ چھ سو روپے مل جاتے ہیں جس سے اپنا اور اہلخانہ کی کفالت کا ذریعہ بن رہا ہوں۔ اللہ بڑا کارساز ہے۔ 

متعلقہ خبریں