تصویر بولتی ہے

2017 ,جون 9



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک): منچن آباد بہاولنگر کا مقصود احمد میٹرک کے بعد اپنے علاقہ میں سٹور چلاتا تھا۔ آٹھ بچے تھے سبھی سکول میں مختلف کلاسوں میں پڑھ رہے تھے۔ زندگی ایک نارمل طریقے سے بسر ہو رہی تھی کہ اچانک کوئی چار سال قبل ایک بیٹی ذہنی بیماری میں مبتلا ہو کر لاہور جنرل ہسپتال داخل کروائی جو جمع پونجی تھی اس کی بیماری کی نذر ہوگئی مگر بیٹی صحت یاب نہ ہو سکی۔ حالت یہ ہوئی کہ اب یہ لاہور کی مختلف سڑکوں پر مسواک بیچتا نظر آ رہا ہے رات کو ہسپتال کے قریبی کسی مسجد میں سو کر گزارتا ہے۔ نہ علاج کروانے کیلئے کوئی معقول آمدن رہی نہ باقی گھر والوں جو اپنے آبائی شہر میں رہ رہے ہیں کوئی پرسان حال زندگی دن بدن انتہائی تلخ ہوگئی ہے۔ اللہ تعالیٰ کسی کو مالی مشکل میں نہ ڈالے۔ 

متعلقہ خبریں